fawad

کابینہ اجلاس کے بعد وزیراطلاعات کی میڈیا بریفنگ

EjazNews

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نےکابینہ اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان پر تیزی سے آگے بڑھ رہے ہیں، نیشنل ایکشن پلان کے بعد دہشت گردی میں کمی آئی۔ ایمنسٹی اسکیم کو کل تک کمیٹی کے سامنے پیش کیا جائے گا۔ کابینہ نے منی لانڈرنگ کے حالیہ کیسز پر تحفظات کا اظہار کیا۔ان کا کہنا تھا کہ ایمنسٹی سکیم کی منظوری نہیں دی جاسکی، منی لانڈرنگ سے متعلق قانون اپنا راستہ خود بنائے گا۔ ماضی میں آصف زرداری اور شریف فیملی نے منی لانڈرنگ کی، شریف فیملی کی منی لانڈرنگ سے متعلق ثبوت سامنے آ رہے ہیں۔ اسحٰق ڈار کا کیس بھی سامنے ہے۔
حمزہ شہباز شریف کے متعلق ان کا کہنا تھا کہ حمزہ شہباز منی لانڈرنگ پر کوئی جواب نہیں دے سکے۔
سابق صدر آصف زردای کے بارے میں وہ کہتے ہیں آصف زرداری نے منی لانڈرنگ کے لیے اپنا ہی بینک خرید لیا، آصف زرداری نے کہا کسی اور کو کیا جمع کروائیں گے اپنا ہی بینک خرید لیتے ہیں۔
اقاموں کی بات پر ان کا کہنا تھا کہ احسن اقبال، نواز شریف ان لوگوں کو اقامے رکھنے کی کیا ضرورت تھی، یہ لوگ اقامے بنا کر کیوں بیٹھے تھے جواب مل جائے گا، ماضی کی تحقیقات عوام نے دیکھی، ہمارے دور کی تحقیقات بھی دیکھ لیں گے۔ عوام کے سامنے ہوشربا انکشاف آئیں گے۔
وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ اسٹیل مل سے متعلق 6 کمپنیوں نے دلچسپی ظاہر کی ہے، تجویز ہے اسٹیل مل کو پبلک پرائیویٹ موڈ پر چلایا جائے گا۔ اسٹیل مل سے ہماری ڈیمانڈ 9 ملین ٹن تک ہے، پیداوار اس وقت 1 ملین ٹن ہے جسے 3 ملین ٹن تک لے جائیں گے۔ آڈیٹر جنرل آفس کو مضبوط بنانے کے لیے بھی اقدامات کیے جائیں گے۔
مزید گفتگو میں انہوں نے کہا کہ ٹیلی کمیونی کیشن سے متعلق لائسنس کی تجدید پر بحث ہوئی، لائسنس کی تجدید پی ٹی اے کی تجاویز سے متعلق کمیٹی تشکیل دی گئی۔ کوٹہ سسٹم ختم کر دیا گیا ہے، گریڈ 1 سے 5 تک میرٹ پر بھرتیاں ہوں گی، اسٹیبلشمنٹ ڈویژن کو این ٹی ایس کو دیکھنے کی ہدایت کی گئی ہے۔
وزیراعظم کے 50لاکھ گھروں کی سکیم کے متعلق کہتے ہیں وزیر اعظم عمران خان کل ہاؤسنگ سکیم کا افتتاح کریں گے۔ پہلے مرحلے میں ڈیڑھ لاکھ اور 5 سال میں 50 لاکھ گھروں کی تعمیر ہوگی۔
ان کا کہنا تھا کہ کابینہ نے سی ٹی ڈی کو منی لانڈرنگ معاملات دیکھنے کا اختیار منظور کیا، قیدیوں کے تبادلے کے معاہدے میں سزائے موت کے قیدی نہیں ہوں گے۔
وزیراطلاعات نے کہا دہشت گردی کے واقعات دنیا بھر میں ہو رہے ہیں، دہشت گردی کے واقعات میں بیرونی ہاتھ بھی ہوتا ہے۔ وہ وقت دور نہیں جب دہشت گردی سے نجات پالیں گے۔کرتار پور کوریڈور پر کلچرل اور میڈیا سینٹر بنایا جائے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  یہ موٹر سائیکل، گاڑی چوری کی بات نہیں بلکہ 158افراد کے قتل کا عذیر بلوچ خود اعتراف کر چکا ہے:علی زیدی