hamza-3

حمزہ شہباز شریف کی نیب پیشی کے بعد میڈیا سے گفتگو

EjazNews

حمزہ شہباز شریف نیب میں پیش ہوئے جس کے بعد انہوں نے میڈیا سے گفتگو کی ،گفتگو میں ان کا کہنا تھا کہ جہانگیر ترین جن کو سپریم کورٹ نے جھوٹا قرار دیا وہ قوم کو انصاف اور قانون کا بتا رہا ہے۔ قوم وزیراعظم سے پوچھتی ہے یہ ہے نیا پاکستان آپ کا ۔ ابھی 8مہینے ہوئے ہیں اور حکومت 3ہزار 308ارب کا قرض لے چکی ہے ۔ کہتے ہیں مجھے نیب کی پیشیوں کا خوف نہیں ۔مجھے خوف ہے عوام کا جو ان کا معاشی قتل ہو رہا ہےاس کا، ابھی یہ فلم شروع ہو ئی ہے اور مہنگائی کا سونامی عوام کو گھیرنے والا ہے ۔ اگر حمزہ شہباز کی پیشیوں سے 22کروڑ لوگوں کا پیٹ بھر جاتا ہے تو حمزہ کو روز بلائیں۔
ان کا مزید کہنا تھا یہ احتساب نہیں ،جب وزیراعظم سے ان کی پالیسیوں کے بارے میں پوچھا جاتا ہے ،ان سے پوچھا جاتا ہے عوام کی مہنگائی سے جو کمر ٹوٹ گئی ہے ۔ان کا کہنا تھا کل عدالت لگے گی ہائی کورٹ کے سامنے۔ میں اللہ سے ڈرنے والا ہوں اگر وزیراعظم کرپشن ثابت نہ کر سکے تو اسی کنٹینر پر کھڑے ہو کر حمزہ سے معافی مانگیں جہاں کھڑے ہو کر لوگوں کو سبز باغ دکھائے تھے۔ ایسا لگتا ہے اس ملک کا کوئی والی وارث نہیں۔ پنجاب میں 8مہینوں میں چوتھا آئی جی تبدیل کیا ہے۔ کبھی سانحہ پاک پتن ہو جاتا ہے کبھی سانحہ ساہیوال ہو جاتا ہے۔ گزشتہ روز وزیراطلاعات اور وزیراعظم کے معاون خصوصی احتساب کی پریس کانفرنس کے بارے میں وہ کہتے ہیں یہ طوطا مینا کی کہانیاں سناتے ہیں اس کا جواب عدالتوں میں دیں گے ۔

یہ بھی پڑھیں:  میرٹ پر پورا اترنے کے باوجود میرے والد سے پیسوں کا مطالبہ کیا گیا:ویرات کوہلی