women skin

خواتین اپنی جلد کو سدا بہار بنا سکتی ہیں

EjazNews

خوبصورت اور صحت مند جلد ہر عورت کی کمزوی ہے یہی وجہ ہے کہ جو عورت خوبصورتی اور جاذب نظر جلد کی حامل ہو لوگ اس کے بارے میں ضرور جاننا چاہتے ہیں کہ وہ اپنی جلد کی حفاظت کیسے کرتی ہے۔ جلد کی نزاکت ، خوبصورتی اور کشش کا راز جلد کے صحت مند ہونے میں ہی پوشیدہ ہے جب آپ اس کی حفاظت کے معاملے میں کسی قسم کی غفلت یا کوتاہی نہ برتیں ۔ آج سے پچاس سا لپہلے خواتین میں صابن اورپ انی سے منہ دھونا روز مرہ کے معمولات میں شامل تھا اور یہی چیزیں وہ جھریوں اور چھائیوں کے خاتمے کے لئے کافی سمجھتی تھیں یا اس سے زیادہ ہوا تو گھریلو ابٹن تیار کر لئے جاتے تھے۔ بہر حال خواتین کو اس بات کا احساس روز اول سے رہا ہے کہ ان کی جاذبیت اور خوبصورتی کا راز یقینا خوبصورت اور صحت مند جلد میں ہی مضمر ہے اب جبکہ کاسمیٹک انڈسٹریریز کے پھیلاﺅ کا رجحان بڑھتا جارہا ہے ۔ جلد کی حفاظت کے لئے نت نئی کریمیں ، لوشن اور دیگر مصنوعات تیار کی جارہی ہیں خواتین اپنے روز مرہ کے بیوٹی پلان میں بہت کچھ تبدیلیاں کرتی نظر آتی ہیں لین فی الحال ہم آپ کو چند ایسے سادہ اور آسان طریقوں کے بارے میں بتائیں گے جن پر اگر عمل کیا جائے تو کوئی وجہ نہیں کہ 50سال تک جلد کو جوان ، تروتازہ اور صحت مند نہ رکھا جاسکے۔
سورج کی روشنی سے بچاﺅ
عمر سے پہلے جلد کے خشک ہوجانے یا چہرے پر جھریاں پڑ جانے میں سورج کی شعاعوں کا بہت بڑا ہاتھ ہوتا ہے۔ لہٰذا جہاں تک ممکن ہو خود کو سورج کی الٹراوائلٹ شعاعوں سے بچایا جائے جب بھی آپ باہر نکلیں دھوپ کا چشمہ استعمال کرنا نہ بھولیں۔ ان شعاعوں کے اثرات کو کم کرنے کیلئے ایسے اچھے اور معیار ی موئسچرائز ر استعمال کریں ۔ یہ سردی، گرمی اور ہر قسم کے موسم میں جلد کی حفاظت کے لئے بہتر اور موثر ثابت ہوتے ہیں۔ ایسے لوشن یا کریمیں لگاتے وقت ہاتھوں کو نظرانداز نہ کریں اس لئے کہ ہاتھ آپ کی عمر کی سب سے پہلی چغلی کھاتے ہیں۔
تمباکو نوشی سے پرہیز
اگرچہ ہمارے ہاں خواتین کی بہت کم تعداد تمباکو نوشی کرتی ہے تاہم تمباکو نوشی کرنے سے جلد میں آکسیجن کی کمی ہو جاتی ہے جس سے جلد میں تروتازگی کم ہو جاتی ہے۔ یہاں تک کہ جلد بے جان اور بے رونق لگنے لگتی ہے ۔ ہونٹوں کے کناروں پر جھریاں جلدی نمایاں ہونے لگتی ہیں۔ سگریٹ نوشی پروٹین، کولا جن اور السٹائن کے لئے بھی انتہائی نقصان دہ ہے یہ آہستہ آہستہ ان اجزاءکو ختم کردیتی ہے جو جلد کو صحت مند اور تروتازہ رکھنے کے لئے لازمی جزو مانے جاتے ہیں۔
کھانے پینے میں احتیاط
جلد کو زیادہ عرصہ تک جوان اور صحت مند رکھنے کے لئے خوراک انتہائی اہم حیثیت رکھتی ہے۔ ہمیشہ کھانے میں احتیاط برتیں یعنی ایسی خوراک کھائیں جو زیادہ ثقیل (ہیوی ڈائٹ) نہ ہو اور اپنی غذا میں تازہ پھلوں اور سبزیوں کو اولیت دیں کیونکہ ان میں وٹامنز اے، سی اور ای شامل ہوتے ہیں جو کہ جلد کو ایسے نقصان دہ اور زہریلے اثرات سے بچاتے ہیں جو گروغبار، دھول مٹی اور سورج کی تیز شعاعوں سے ہم تک پہنچتے ہیں۔ ٹماٹر بھی جلد کے لئے بہت مفید ہوتا ہے کیونکہ اس میں وٹامنز ای کی کثرت جلدکے لئے ایک بہترین ٹانک خیال کی جاتی ہے۔ ٹماٹر کے علاوہ بادام، اخروٹ اور ہر قسم کی پھلیوں میں بھی یہ وافر مقدار میں پائے جاتے ہیں یہی وجہ ہے کہ یہ چیزیں اور ان کا تیل جلد کو صحت مند رکھنے میں نہایت معاون ثابت ہوتا ہے۔ کولڈ ڈرنک کے بجائے زیادہ سے زیادہ پھلوں کے جوس استعمال کریں صاف پانی کا تو جواب ہی نہیں۔ جہاں تک ممکن ہو سکے زیادہ سے زیادہ پئیں۔ ایک اندازے کے مطابق روزانہ 8سے 10گلاس پانی جلد جوان رکھنے کے لئے بہت ضروری ہے۔ بعض ماہرین 2لٹر پانی روزانہ پینے کا مشورہ دیتے ہیں۔
نیند پوری کریں
بھرپور اور پرسکون نیند بھی جلد پر نہایت بہتر اثرات مرتب کرتی ہے کیونکہ نیند میں ہمارے جسم کے خراب سیلز کی مرمت کا کام ہو رہا ہوتا ہے۔ نیند کے بعد ہماری جلد پھر اس قابل ہو جاتی ہے کہ وہ بیرونی اثرات کا مقابلہ کر سکے۔ نیند کے دوران خون میں آکسیجن کی روانی تیزی سے ہونے لگتی ہے اور یہی چیز جلد میں نکھار اور تازگی کا باعث بنتی ہے۔ لہٰذا کوشش کریں کہ حتیٰ الامکان اپنی نیند پوری کی جائے۔ اس کےل ئے آٹھ گھنٹے کی نیند ضروری تصور کی جاتی ہے۔
یہ تو تھیں وہ چند اہم باتیں جن کا خیال رکھنا ضروری ہے۔ اب ہم آپ کو بتاتے ہیں کہ جلد کو جوان رکھنے میں کون سی عمر میں کون سا طریقہ کا ر زیادہ موثر رہے گا۔
20سال
سولہ سترہ سال اور بعض لڑکیوں میں اس سے پہلے چہرے پر کیلین نکلنا شروع ہو جاتی ہیں بعض اوقات چہرے پر داغ دھبے بھی نمایاں ہو جاتے ہیں جن میں سے سفید رنگ کے دھبے عموماً کیلشیم کی کمی کے باعث ہوتے ہیں بہر حال اس عمر میں جلد کی صفائی بہت ضروری ہے۔ گھر سے نکلتے وقت سن اسکرین یا کریم وغیرہ ضرورل گائیں ۔ہفتہ وار ماسک بھی لگایا جائے تو اور زیادہ اچھے نتائج ملیں گے۔ چکنائی اور زیادہ مرچ مصالحے والے کھانوں سے اجتناب کریں ۔ غذا کامتوازن ہونا بھی ضروری ہے۔
30سال
اس عمر میں جلد کافی حساس ہو جاتی ہے اور عمر کا پتہ چلنے لگتا ہے۔ خاص طور پر آنکھوں کے ارد گرد اور ہونٹوں کے آس پاس جھریوں کا آغاز ہو جاتا ہے۔ آج کل جھریوں کو ختم کرنے والے بیشتر لوشنز اور کریمیں بازار میںم وجود ہیں وہ استعمال کریں جبکہ آنکھوں کے لئے آئی کریم بھی بہتر رہتی ہے۔ اس کے علاوہ کوئی اچھی سی نائٹ کریم استعمال کریں۔
40سال
یہ وہ عمر ہوتی ہے جب جلد پر جھریاں زیادہ نمایاں ہونے لگتی ہیں۔ خاص طور پر ناک اور منہ پر جھریاں پڑ جاتی ہیں اور ہونٹوں کے گرد لکیریں گہری ہو جتای ہیں جبکہ گردن بھی جھریوں کی زد میں آجاتی ہے۔ اس کے لئے اینٹی ایجنگ ڈے اینڈ نائٹ کریمیں بھی مارکیٹ میں موجود ہیں۔
50سال
اس عمر میں جلد کے سیلز بننا بند ہوجاتے ہیں اور چہرے پر تیل کے اثرات بھی ختم ہو جاتے ہیں اور پھر چہرے پر داغ دھبے بھی نمودار ہونے لگتے ہیں۔ چنانچہ دن میں ایسی کریمیں استعمال کریں جس میں وٹامن ای شامل ہو ۔گردن کی جھریوں کے لئے Elastic Neck Creamبہت فائدہ مند ثابت ہوتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا آپ بالوں کو رنگتی ہیں؟