sodan

کرفیو کے باوجود سوڈان میں عوام کا دھرنا

EjazNews

سوڈانی فوج کا کہنا ہے کہ وہ اقتدارمیں نہیں رہنا چاہتی، اگر ایک مہینے میں حکومت بن جاتی ہے تو ہم اقتدار ان کے حوالے کر دیں گے۔نئی حکومت سویلین کے ساتھ مل کر چلائیں گے۔
سوڈان میں گزشتہ روز سے لگنے والے مارشل لاء کے نفاذ کے بعد کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے۔ فوج نے کرفیو کی پابندی نہ کرنے والوں کو خطرناک نتائج سے بھی خبردار کیا ۔ سوڈان کی مسلح افواج کی طرف سے تمام شہریوں پر زور دیا گیا ہے کہ وہ کرفیو کی پابندی یقینی بنائیں، فوج نے کرفیو کی پابندی نہ کرنے کے خطرناک نتائج سے بھی خبردار کیا ہے۔ مسلح افواج کی طرف سے کرفیو کا اعلان شہریوں کی جان و مال کے تحفظ کے پیش نظر کیا گیا ہے، شہریوں کو احتجاج کا حق ہے مگر انہیں کرفیو کے اوقات میں اس کی پابندی کرنا ہوگی۔
عرب ٹی وی کے مطابق عینی شاہدین نے بتایا کہ مسلح افواج کی طرف سے رات کا کرفیو لگانے کے باوجود ہزاروں افراد کا دھرنا جاری ہے۔ عینی شاہدین نے بتایا کہ مظاہرین رات پر ا من، انصاف اور آزادی کے نعرے لگاتے رہے، فوج کی طرف سے مظاہرین نے مسلسل چھٹی رات دھرنے میں گزاری۔
یاد رہے گزشتہ عوامی احتجاج کے بعد سوڈان کے صدر عمر البشیر کے خلاف مظاہرے کر رہے تھے جو آج رنگ لے آئے اور صدر عمر حسن البشیر صدارت سے مستعفی ہو گئے جس کے بعد انہیں فوج نے گرفتار کرکے نظر بند کر دیا تھا اور وہ تاحال نظر بند ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا دنیا بے وقوف ہے؟