hamza shabaz ramzan

حمزہ شہباز نیب میں پیش

EjazNews

قومی احتساب بیورو لاہور نے پنجاب اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حمزہ شہباز کوآمدن سے زائد اثاثوں کے کیس میں نیب میں پیش ہو گئے۔ تین ر کنی تفتیشی ٹیم کی جانب سے منی لانڈرنگ اور اثاثہ جات سے متعلق سوالات کئے گئے۔ حمزہ شہباز سے 2گھنٹے 45منٹ تک تفتیش کی گئی۔ حمزہ شہباز نے سوالات کا جواب دیتے ہوئے کہا مالی معاملات سلمان شہباز دیکھتے ہیں میں صرف سیاسی معاملات دیکھتا ہوں، جس کے بعد حمزہ شہباز سوالات کے جوابات ریکارڈ کرا کے نیب دفتر سے روانہ ہو گئے۔
یاد رہے گزشتہ روز میاں حمزہ شہباز شریف کو نیب حکام ان کی رہائش گاہ ماڈل ٹائون سے گرفتار پہنچے ۔ میاں حمزہ شہباز شریف نے گرفتاری نہ دی ۔گرفتاری کیلئے آنے والے نیب حکام اور مسلم لیگ ن کے پارٹی کارکنوں کے درمیان جھڑپیں بھی ہوئیں اس دوران پولیس والے بھی اپنے فرائض انجام دینے کیلئے کوشاں رہے۔
جبکہ گزشتہ روز لاہور ہائیکورٹ کے دورکنی بینچ نے حمزہ شہباز شریف کے کیس کی سماعت کی۔ حمزہ شہباز کے وکیل اعظم نذیر تارڑ نے دلائل دیتے ہوئے کہا کہ رمضان شوگر ملز کا ریفرنس دائر ہونے کے باوجود نیب کی جانب سے خدشہ ہے نیب صاف پانی کمپنی سکینڈل کیس میں بھی بلاجواز گرفتار کرنا چاہتا ہے نیب کی جانب سے مسلسل ہراساں کیا جارہا ہے اور گرفتاری کی کوشش کی جارہ یہے۔ وکیل کا کہنا تھا کہ نیب ایک انکوائریمیں بلوا کر دوسرے کیس میں گرفتار کرلیتا ہے ۔ نیب سیاستدانوں کو ایسے بہانے بنا کر تنگ کرتی ہے ۔ عدالت سے استدعا کی گئی ہے کہ رمضان شوگر ملز اور صاف پانی کیس میں عبوری ضمانت منظور کرے۔

یہ بھی پڑھیں:  انگلینڈ فائنل میں پہنچ گیا، نیوزی لینڈ کے ساتھ فائنل کھیلے گا