چہرے پر بال آ پ کی خوبصورتی متاثر کرتے ہیں

EjazNews

عورت کا ر وپ رنگ چہرے کی شادابی کا مرہون منت ہوتا ہے مگر اس کا چہرہ لاپرواہی ، بے احتیاطی کی وجہ سے ایسے امرا ض کا مسکن بن جاتا ہے جو اس کی ساری خوبصورتی، شادابی اور خوش مزاجی چھین کر اسے ڈیپریشن میں مبتلا کر دیتا ہے۔ ویسے تو ہمارے ہاں عورتوں کے چہرے پر چھائیاں،کیل ، مہاسے عام سی بیماریاں تصور کی جاتی ہیں اور اس کے علاج کی طرف فوری اور خاص توجہ نہیں دی جاتی بلکہ عورتیں بازاری اور عام سی کریموں کے ذریعے اس مرض کو دور کرنے کی کوشش کرتی ہیں ، لیکن انہیں کامیابی حاصل نہیں ہوتی اور یہ امراض پہلے سے زیادہ بگڑ کر ان کے چہرے کو بھدا بنا دیتےہیں۔
یہ کس قدر دکھ کی بات ہے کہ عورتیں اپنے چہرے کی رعنائی کے بارے میں حد سے ز یادہ حساس ہونے کے باوجود اسے بھدا اور وقت سے پہلے جھریوں زدہ بنانے کی کوشش میں لگی رہتی ہیں۔ کسی عورت کا چہرہ جس قدر ملائم اور صاف ہو گا اسی قدر وہ اپنا تاثر چھوڑنے میں کامیاب ہوتی ہے۔ مردوں اور عورتوں کے چہرے میں جہاں یہ نزاکت ہوتی ہے وہاں چہرے کے بال مرد اور عورت میں فرق قائم کرنے میں اہم کر دار ادا کرتے ہیں۔ مردوں کے چہرے پر بال ان کی مردانگی کی علامت اورشناخت ہوتے ہیں جبکہ عورتوں کا چہرہ بالوں سے بے نیاز ہوتا ہے مگر عورتوں کے چہرے پر بھی مردوں جیسے بال نکل آتے ہیں جو کہ بے شمار نفسیاتی ، جسمانی اور معاشرتی مسائل کا پیش خیمہ بنتے ہیں۔ عورتوں کے چہرے پر مردوں جیسے بال و بال جان ثابت ہوتے ہیں اکثراوقات ایسی عورتیں گھر بار سے کٹ کر رہ جاتی ہیں اور وہ شرمندگی کے باعث اپنا چہرہ چھپائے پھرتی ہیں ایسی عورتوں کیلئے شادی کے مسائل بھی پیدا ہو جاتے ہیں ۔ ان کے والدین بھی اس مسئلے پر پریشان نظر آتے ہیں۔معاشرتی مسائل اس وقت گھمبیر ہو جاتے ہیں جب شادی کے بعد بچوں کی پیدائش میں دشواری کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔
میڈیکل سائنس کی ترقی نے عورتوں کو ان بالوں سے نجات کیلئے بہت سے علاج متعارف کرائے ہیں۔ چہرے کے بال عورتو ں میں مردانہ ہارمونز کی خون میں مقدار زیادہ ہونے سے پیدا ہوتے ہیں۔ ایسا عموماً ovariesکا سائزبڑا ہونے سے ہوتا ہے۔ اس وجہ سے مردانہ ہارمونز بھی زیادہ مقدار میں بننے لگتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  میک اپ کے ذریعے اپنی جلد میں نکھار کیسے پیدا کریں؟