Hamza Shahbaz

نیب کا حمزہ شہباز کے گھر چھاپہ

EjazNews

نیب کے ارکان نے پنجاب میں اپوزیشن لیڈر میاں حمزہ شریف کے گھر چھاپہ مارا۔ اس چھاپے میں کوئی گرفتاری تو نہیں ہوئی لیکن حکومت نے اپنے لیے بدنامی ضرور کمائی ہے۔ اب یہ رائے مزید مضبوطی اختیار کرتی جا رہی ہے کہ جیسے حکومت اپوزیشن کیخلاف ایک محاذ کھولے ہوئے ہے۔پاکستان میں سوائے سیاستدانوں کے احتساب کے کوئی اور کام نہیں ہے۔ پھر دوسری طرف دیکھیں جتنے بھی کیس ہوئے ہیں سیاستدانوں کیخلاف ان میں فیصلے کیا ہوئے ہیں۔ یا تو نیب اس قدر مضبوط ریفرنس بنائے کہ کروڑوں روپے والے وکیل اس کو جھٹلا نہ سکیں۔ اس بات کو وزیراعظم نے بھی اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ اگر آپ کے پاس پختہ ثبوت نہیں ہیں تو جس کو آپ پکڑو گئے وہ آسانی سے چھوٹ جائے گا پہلے اپنا گرائنڈ ورک اس قدر مضبوط کر لیں کہ اس کو کوئی بھی شخص اگنور نہ کر سکے۔ کیونکہ عدالتیں ثبوت مانگتیں ہیں نہ کہ زبانی پیش رفت۔ جن لوگوں کو آپ گرفتار کر رہے ہیں وہ عوامی نمائندے ہیں۔ پہلے مضبوط ثبوت اکھٹے کیجئے انہیں عدالتوں کے سامنے پیش کیجئے پھرعوامی نمائندوں پر ہاتھ ڈالئے۔

یہ بھی پڑھیں:  میں نے دو برسوں میں نعیم الحق کو کینسر سے بہادری سے لڑتے دیکھا:وزیراعظم

آج کی صورتحال میں میاں حمزہ شہباز شریف نے پریس کانفرنس کر کے کہا ہے چادر اور چار دیواری کی پامالی کی گئی ہے۔ اور ایسے میرے گھر میں گھسے جیسے میں دہشت گرد ہوں جبکہ دوسری طرف نیب ارکان کا کہنا تھا ان کوزدو کوب کیا گیا اور جان سے مارنے کی دھمکیاں دیں گئیں۔