bilawal-2

بلاول بھٹو زرداری کا نانا کی برسی پر خطاب

EjazNews

بلاول بھٹو زرداری نے ذوالفقار علی بھٹو کی برسی پر خطاب کرتے ہوئے حکومت پر کڑی تنقید کی۔ان کا کہنا تھا کہ آج انڈیا کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر جو باتیں کر رہے ہیں یہ ذوالفقار علی بھٹو کی وجہ سے ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ میں یہ نہیں کہتا کہ احتساب نہ کرو ، احتساب کرو میرا احتساب کرو ، لیکن انتقال نہ لو، احتساب کے نام پر پولیٹیکل انجینئرنگ نہ کرو، احتساب کے نام پر خود کے گناہ نہ چھپائو۔ جب میں پوچھتا ہوں کہ نیشنل ایکشن پلان پر عمل کیو ں نہیں ہو رہا۔ جب میں پوچھتاہوں کہ وفاقی وزیروں کے کالعدم تنظیموں سے رابطے کیوں ہیں۔ جب میں کہتا ہوں کہ سیاست دانوں کو جیل اور دہشت گردوں کو ریسٹ ہائوس میں کیوں رکھا جاتا ہوں ، میں نے تین وزیروں کو ہٹانے کا مطالبہ کیا لیکن خان نے ان تین وزیروں کو تو نہیں نکالا الٹا ایسے شخص کو وزیر بنا دیا جس پر ڈینیئل پر ل سے لے کر بے نظیر بھٹو تک کی شہادت میں ملوث ہونے کا الزام ہے۔
عدالتوں پر تنقید کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ بھٹو شہید کو انصاف ملنے سے ہی انصاف کی ابتداء ہوگی۔
بھٹو حکومت نے بے آئین ملک کو آئین دیا، عوام کو حقوق دئیے، مظلوم کو آواز دی

یہ بھی پڑھیں:  میرے قبر میں جانے کے بعد بھی میرے خلاف پبلک فنڈ میں کرپشن کا ایک دھیلا بھی نکل آئے تو میری لاش کو نکال کر پول پر لٹکا دیا جائے:میاں شہبازشریف

چیئرمین پی پی نے کہا کہ جو لوگ ملک کو ایٹمی قوت بنتے دیکھنا نہیں چاہتے تھے وہی لوگ بھٹو کی پھانسی کا سبب بنے، جس نے آئین بنایا وہ غدار تھا یا جس نے آئین توڑا وہ غدار تھا۔