وزیراعظم نے بلوچستان میں پہلے دل کے ہسپتال کا افتتاح کر دیا

EjazNews

وزیراعظم پاکستان عمران خان نے بلوچستان میں دل کے پہلے ہسپتال کا افتتاح کر دیا ہے۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ہمیں مغربی راہداری کو پہلے بنانا چاہیے تھا کیونکہ یہ علاقے بہت پیچھے رہ گئے ہیں۔ ان کی طرف خصوصی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ ہم ترقیاتی کام آنے والے الیکشن کیلئے نہیں بلکہ عوام کیلئے کر رہے ہیں ہم ترقیاتی کام یہ سوچ کر نہیں کر رہے کہ اگلے پانچ سال میں کون کون سے منصوبے کا افتتاح کرنا ہے بلکہ ہم ملک کے لیے کام کر رہے ہیں جب میں آرہا تھا تو میں نے دیکھا کوئٹہ کا شہر پھیل رہا ہے اسی طرح دوسرے شہر بھی پھیل رہے ہیں لیکن بے ترتیبی سے۔ ہم نے سب سے پہلے اسلام آباد کا ماسٹر پلان تیار کرایا ا س کے بعد جہاں جہاں ہماری حکومت ہے وہاں ہم ماسٹر پلان تیار کروا رہے ہیں بلوچستان کے وزیراعلیٰ سے بھی میں کہوں گا کہ وہ بلوچستان کا ماسٹر پلان تیار کروائیں تاکہ شہر کسی ترتیب سے بڑھیں۔ میرے ساتھ وزیرریلوے خصوصی طور پر آئے ہیں ہم پلان کر رہے ہیں کہ ریلوے کو تفتان تک وسعت دی جائے اس کے لیے انہوں نے کافی کام بھی کیا ہے۔ جو وزیراعلیٰ بلوچستان سے وہ شیئر کریںگے۔وزیراعظم نے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عمومی طور پر یہ تاثر پایا جاتا ہے کہ یہاں ترقی سے باہر کے لوگ آکر چھا جائیں گے اور مقامی آبادی اقلیت بن جائے گی۔ اس کو ختم کرنے کے لیے یہاں پر وزیراعلیٰ سکل ڈویلپمنٹ کے وسیع نیٹ ورک قائم کریں کیونکہ اگر مقامی آبادی ٹرین نہیں ہوگی تو مجبوراً باہر کے لوگ لانے پڑیں گے۔ان کا کہنا تھا کہ کے پی کے میں ہمیں سب سے زیادہ فائدہ ولیج کونسل سے ہوا اور میں وزیراعلیٰ بلوچستان سے بھی کہوں گا کہ وہ ویلج کی سطح پر کام کریں کیونکہ ان کے لیے اتنی دور شہر میں آنا مشکل ہوتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ مجھے بہت خوشی ہے کہ بلوچستان میں ایک ایسا وزیراعلیٰ ہے جو اپنے لوگوں کا درد رکھتا ہے۔ جب انسان دل سے بات کرتا ہے تو اس کا اثر ہوتا ہے۔
وزیراعلیٰ بلوچستان نے ان کا شکریہ ادا کیا ا وراسے صوبے کے عوام کے لیے تحفہ قرار دیا۔ وزیراعلیٰ بلوچستان کا کہنا تھا کہ ماضی میں منصوبے تو بنائے گئے لیکن صرف دکھلاوے کے لیے۔

یہ بھی پڑھیں:  25مارچ 1992جب ہم ورلڈ کپ جیتے