سنہری حروف

EjazNews

٭مصروف زندگی نماز کو مشکل جبکہ نماز مصروف زندگی کو آسان بنا دیتی ہے۔
٭والدین سے سخت لہجے میں بات کرنے و الے برباد ہو جاتے ہیں۔
٭جو شخص ارادے کا پکا ہو وہ دنیا کو اپنی مرضی کے مطابق ڈھال لیتا ہے۔
٭جس پر نصیحت اثر نہ کرے وہ جان لے کہ ایمان سے اس کا دل خالی ہے۔
٭تعریف کے بھوکے لوگ با صلاحیت نہیں ہوتے۔
٭لالچ انسان کو تباہ کر دیتی ہے۔
٭عمدہ سلوک عمر کو بڑھا دیتا ہے۔
٭آسمان سے دولت برسنے کی خواہش کی بجائے رحمت خداوندی برسنے کی خواہش کرو۔
٭خدا کے نزدیک بہترین دوست وہ ہے جو اپنے دوست کا خیر خواہ ہو۔
دنیا میں سب سے کمزور وہ ہے جو اپنی خواہش پر قابو نہیں پاسکتا اور سب سے قوی وہ ہے جو ضبط کی طاقت رکھتا ہو۔
٭اگر تم کچھ حاصل کرنا چاہتے ہو تو اپنا ایک لمحہ بھی ضائع نہ کرو۔
٭اگر خوش رہنا چاہتے ہو تو اس چیز کو مت چاہو جو تمہاری پہنچ سے دور ہو۔
٭اچھا اخلاق انسان کو زمین کی گہرائی سے بلندی تک پہنچاتا ہے۔
٭کسی کا دل نہ دکھائو کہ دکھی دل کی فریاد آسمان کا سینہ چیر دیتی ہے۔
٭یہ دنیا مکافات عمل ہے پس تم اگر کسی کی راہ میں پتھر ہو گئے تو آنے والا وقت تمہاری راہ میں پہاڑ بن جائے گا۔
٭خوبصورتی اور بدصورتی کا معیار کر دار ہے۔
٭علم وہ لباس ہے جو کبھی پرانا نہیں ہوتا۔
٭زندگی بغیر محنت کے مصیبت اور بغیر عقل کے حیوانیت ہے۔
٭مشکلات سے نہ گھرائو کیونکہ مشکلات ہی انسان کو کامیاب بناتی ہے۔
٭زبان کا زخم تلوار کے زخم سے زیادہ گھائل کرتا ہے۔
٭وہ انسان سب سے غریب ہے جس کا کوئی دوست نہیں ہے
٭خوش کلامی ایک ایسا پھول ہے جو کبھی نہیں مر جھاتا
٭انسان دولت سے نہیں اخلاق سے پہچانا جاتا ہے۔
٭کامیابی کا رستہ کبھی بند نہیں ہوتا۔
٭جاہل، احمق اور بد کردار کبھی اچھا مشورہ نہیں دے سکتا۔
٭ادب سے بڑھ کر کوئی میراث نہیں
٭مشورہ سے بڑھ کر کوئی مددگار نہیں
٭عقل سے بڑھ کر کوئی ثروت نہیں
٭جہالت سے بڑھ کر کوئی بے کائیگی نہیں
٭دنیا کی تلاش میں کوئی فریضہ نہ گنوا دینا ، علم فکر کوقوت و جلا بخشتا ہے۔
٭علم عقل کی نشانی ہے جس کے پاس علم ہو وہ صا حب عقل ہوگا
٭اپنی غلطی کا اعتراف بزرگی کا باعث بنتا ے ۔ پستی کا نہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  بوجھو تو جانیں