گھوٹکی کی دونوں بہنوں کی اسلام آباد ہائیکورٹ میں تحفظ جان کی درخواست

EjazNews

اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر کی گئی درخواست میں وزارت داخلہ ، وزیر اعلیٰ سندھ، آئی جی پولیس پنجاب، سندھ ، اسلام آباد اور پیمرا سمیت ارکان قومی اسمبلی رمیش کمار اور ہری لال کو فریق بنایا گیا ہے۔
جیو نیوز کے مطابق دونوں بہنوں کی جانب سے درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ میڈیا میں ہم سے متعلق غلط پروپیگنڈا کیا جاہا ہے، غلط پروپیگنڈے کے باعث دونوں بہنوں اور شوہروں کی جان کو خطرات ہیں۔ درخواست میں کہاگیا ہے کہ میڈیا میں ہم سے متعلق غلط پروپیگنڈا کیا جارہا ہے ، غلط پروپیگنڈے کے باعث دونوں بہنوں اور شوہروں کی جان کو خطرات ہیں۔ درخواست میں کہاگیا ہے کہ دونوں بہنیں عرصہ دراز سے اسلامی تعلیمات سے متاثر تھی اور جان سے مارنے کے خوف کے باعث دونوں لڑکیوں نے اسلام قبول کرنے کا اعلان نہیں کیا، 23مارچ 2019 کو خان پور بار کے سامنے اسلام قبول کرنے کا باقاعدہ اعتراف کیا۔
درخواست کے مطابق درخواست گزاروں نے زبردستی نہیں بلکہ اپنی مرضی سے اسلام قبول کیا لہٰذا تحفظ فراہم کیا جائے اور اسلام آباد ہائیکورٹ حکومت کو دونوں بہنوں کے تحفظ کیلئے اقداما ت کرنے کا حکم دے ۔ دوسری جانب گھوٹکی کی دو بہنوں کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں دائر درخواست سماعت کیلئے مقرر کر دی گئی ہے اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس جسٹس اطہر من اللہ کل سماعت کریں گے۔
یاد رہے کہ گزشتہ دونوں بہنوں کے لاپتہ ہونے پر وزیراعظم نے نوٹس لیا تھا جس کے بعد دونوں لڑکیاں اپنے شوہروں کے ساتھ منظر عام پر آئیں۔ اس معاملے میں انڈین وزیر خارجہ سشما سوراج بھی آئیں اور وزیراطلاعات سے ان کی ٹویٹر پر نوک جھونک بھی ہوئی۔

یہ بھی پڑھیں:  حمزہ شہباز کے جسمانی ریمانڈ کی درخواست مسترد، 20جولائی کو دوبارہ پیشی ہوگی