نیوزی لینڈ نے دنیا میں نئی تاریخ رقم کر دی

EjazNews

نیوزی لینڈ میں نماز جمعہ کی ادائیگی ہو چکی ہے نماز جمعہ کے وقت مسجد کے ساتھ پارک میں ایک بڑی تعداد میں مسلمانوں کے علاوہ دوسرے مذاہب سے تعلق رکھنے والے لوگ موجود تھے۔ خود نیوزی لینڈ کی وزیراعظم بھی سکارف پہن کر مسلمانوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کے لیے موجود تھیں۔ نماز جمعہ کے لیے جب اذان دی گئی تو وہ ٹی وی اور ریڈیو پر نشر کی گئی۔ اس کے بعد خطبہ بھی ٹی وی اور ریڈیو پر نشر کیا گیا۔

سانحہ کراسٹ چرچ کے بعد نیوزی لینڈ نے یہ ثابت کر دہا ہے کہ انسانیت ابھی زندہ ہے اگر دنیا میں شدت پسند ہیں تو وہ بھی ہیں جو محبت اور یکجہتی کا مثالی معاشرہ ہیں۔ دنیا کو نیوزی لینڈ سے بہت کچھ سیکھنے کی ضرورت ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  سدھو صاحب امن کی راہ بڑی مشکل ہوتی ہے