چیک ری پبلکن ماڈل

غیر ملکی ماڈل کو منشیات اسمگلنگ کیس میں8سال قید1،لاکھ13ہزار جرمانہ

EjazNews

چیک ریپبلک سے تعلق رکھنے والی ماڈل کو 10جنوری 2018ءکو لاہور ائیر پورٹ پر 8کلو ہیروئن کے ساتھ گرفتار کیا گیا تھا۔وہ دبئی کی فلائٹ کے لیے جارہی تھیں۔ جب ان کو گرفتار کیا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ وہ پاکستان میں ماڈلنگ کرنے کے لیے آئی ہیں ۔ یہ ان کو کسی نے دی تھی کہ وہ ابھی ان سے واپس لیتے ہیں۔ تین ملزمان کو بھی نامزد کیا گیا تھا جو کہ اشتہاری ہیں جبکہ ایک شخص شعیب کو عدم ثبوتوں کی وجہ سے بری کر دیا گیا ہے۔
ایڈیشنل سیشن جج شہزاد رضا نے کیس کا فیصلہ سنایا ،عدالت نے غیر ملکی ماڈل کےخلاف فیصلہ سنایا جس کے مطابق ماڈل ٹریزا کو 8سال 8ماہ قید اور ایک لاکھ 13ہزار روپے جرمانے کی سزا دی گئی ہے۔پراسیکیوشن نے ٹریزا کی ہیروئن اسمگل کرنا ثابت کر دیا ۔تاہم ماڈل ٹریزا اپنی بے گناہی ثابت نہیں کر سکی۔عدالت نے فیصلے میں کہا ہے کہ ملزمہ عدالت کے فیصلے کے خلاف ہائی کورٹ میں رٹ کر سکتی ہیں۔

چیک ری پبلکن کی ماڈل جس سے ہیروئن برآمد ہوئے
یہ بھی پڑھیں:  27دسمبر کو ہمارے ساتھ 72 لوگ ہوں یا 72 ہزار ہم لیاقت باغ جائیں گے:بلاول بھٹو زرداری