fast food

امراض پیدا کرنے والی غذائیں

EjazNews

کیا آپ کو معلوم ہے کہ کچھ کھانے ایسے بھی ہوتے ہیں جو آپ کے جسم میں امراض پیدا کرنے کا سبب بنتے ہیں۔جنہیں کھانے سےپہلے بیماریوں کو دعوت دیتے ۔ٹافٹ ڈرنک میں 40سے72ملی گرام تک نشیلے اجزا گلیسرین، الکوحل، الیسٹرگم، سائیٹرک ایسیڈ اور حیوانوں سے حاصل کردہ گلسرول وغیرہ پائے جاتے ہیں۔ کہیں زنک لگ گیا ہو تو سافٹ ڈرنک میں کپڑا بھگو کر رگڑنے سے وہ ہٹ جائے گا۔ ہڈیوں اور دانتوں کو گلانے میں مٹی کو بھی کئی برس لگ جاتے ہیں لیکن سافٹ ڈرنک میں دس دن تک پڑا رہنے دیں پھر چمتکار دیکھیں۔ایسے خطرناک سافٹ ڈرنک پی کر ہم رسائن ہی پیٹ میں اکٹھے کر رہے ہیں اور اپنی انتڑیوں، جگروغیرہ کو نقصان پہنچا رہے ہیں۔ لہٰذا ہم اس خطرناک پینے کی چیز کے ذریعہ بچوں، مہمانوں اور خود کو بھاری نقصان پہنچا رہے ہیں۔
دوسری طرف ایک برطانوی طبی تحقیق میں اس بات کا انکشاف کیا گیا ہے کہ اگر آپ کسی ذہنی الجھن کا شکار ہیں یا کسی چیز سے تکلیف محسوس کر رہے ہیں تو فاسٹ فوڈ ہرگز استعمال نہ کریں ورنہ ایسا کرنا آپ کیلئے نقصان دہ ہے۔ انٹرنیشنل جرنف آف فوڈ سائنسز یانڈ نیوٹیریشن میں چھپنے والی تحقیق کے مطابق جنک فوڈ آپ کو ڈپریشن سمیت مختلف دماغی و نفسیاتی مسائل سے دو چار کر سکتا ہے۔ اس سے قبل کئی بار اس بات کی تصدیق کی جا چکی ہے کہ جنگ فوڈ دل کی بیماریوں، ہائی بلڈ پریشر اور دیگر مختلف بیماریوں کا سبب بنتا ہے۔ تحقیق میں بتایا گیا ہے کہ جنگ فوڈ کا استعمال عمر، جنس اور ازدواجی حیثیت سے قطع نظر ذہنی و نفسیاتی بیماریوں کا سبب بن سکتا ہے۔ تحقیق کے سربراہ پروفیسر جم ای بانتا نے کہا کہ اب وقت آگیا ہے کہ اس بات پر جامع تحقیق کی جائے کہ مختلف غذائیں ذہنی صحت پر کس طرح اثر انداز ہو سکتی ہیں انہوں نے کہا کہ ذہنی بیماریوں کے شکار افراد کو دوا اور کائونسلنگ کے ساتھ ساتھ صحت مند غذائوں کی طرف راغب کرنے کی بھی ضرورت ہے۔
اس کے ساتھ ساتھ یہ جان لینا بھی ضروری ہے کہ کئی چیزیں سبزی، پھل، اچار ، دہی، کھیر، مٹھائی، پاپڑ وغیرہ ایک ساتھ لینے سے کیمیاوی فعل شروع ہو جاتا ہے اور نظام ہضم بگڑ جاتا ہے۔ ایک وقت میں یک چیز کھانا مثالی خوراک ہے۔ دراصل ملی جلی خوراک یعنی ایک وقت میں ایک ساتھ ایک سے زیادہ قسم کی خوراک لینا ہی غلط قدم ہے۔ ایک وقت میں جتنا ہی کم طرح کی چیزیں خوراک میں لی جائیں گی اتنی ہی آسانی سے خوراک جسم کو ہضم کرنے میں مدد ملے گی۔

یہ بھی پڑھیں:  پتے کی پتھری علامات اور بچاو
کیٹاگری میں : صحت