ایک تصویر

ایک تصویر جس نے کیا سب کو حیران

EjazNews

آپ نے ینگ ڈاکٹرز کا یہ رویہ تو دیکھا ہی ہوگا کہ اپنے مطالبات کے منوانے کے لیے سڑکوں پر آگئے ہوں اور ہسپتال میں نہ کام کیا اور نہ کر نے دیا۔ جس سے بہت سی اموات بھی ہوئیں۔ پنجاب میں یہ احتجاج ہمیں گاہے بگاہے دیکھنے کو ملتا رہتا ہے اور اس دفعہ تو سندھ میں بھی ڈاکٹروں کی ہڑتال سے بہت سی اموات ہوئیں ۔ ان ڈاکٹروں میں سے خیبرپختونخوا کے ایک ڈاکٹر کی تصویر سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہی ہے جو انسانیت کو رقم کر رہی ہے۔ ڈاکٹر ایک بزرگ نشئی مریض کو اپنے ہاتھوں سے کھانا کھلا رہا ہے۔ یہ تصویر انسانیت کی منہ بولتی ثبوت ہے۔ جس کی تعریف میں نہ صرف وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا بھی آئے ۔
وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان کہتے ہیں گزشتہ روز منشیات کے عادی افراد کی بحالی مراکز منتقلی کے احکامات جاری کئے تو دل میں ان مریضوں کی دیکھ بھال کی فکر لاحق تھی مگر آج خیبر ٹیچنگ ہسپتال پشاور میں ان ڈاکٹر صاحب کے حسن سلوک اور انسانی ہمدردی کو دیکھ کر کافی مطمئن ہوں۔
عامر کہتے ہیں کچھ اچھا سننے اور دیکھنے کو ملا۔
اخلاق پشتین لکھتے ہیں کسی کی خدمت کرنے پر اللہ ملتا ہے۔
زین الحق کہتے ہیں سارے ڈاکٹر ایک جیسے نہیں یا اس جیسے نہیں، وہ لاکھوں ہزاوں میں ایک یا دو ہوتے ہیں۔
شاکر اللہ شاکر لکھتے ہیں اللہ تعالیٰ آپ کو توفیق اور طاقت دے کہ صوبے سے منشیات کے خاتمہ ہو جائے اور منشیات کے عادی لوگوں کا علاج اچھے طریقے سے ہو۔
بابو جان لکھتے ہیں خیبر پختونخوا حکومت صرف اشتہارات تک محدود ہے اس کے علاوہ کوئی عملی کام نہیں کرتے ، نئی ضم شدہ قبائلی اضلاع میں خاص کر تھری جی ، فورجی، ڈیپارٹمنٹ ، ڈویلپمنٹ سیکٹر میں کوئی سنجیدگی دکھائی نہیں دیتی۔ ہم نے عمران خان کو سپورٹ کیا ہے اور محبت ہے لیکن ہم پر رحم کریں۔
وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کی ہدایات پر منشیات کے عادی افراد کے علاج و بحالی کا کام صوبے میں ہو رہا ہے شنید ہےگزشتہ روز 53منشیات کے عادی افراد کو خیبر ٹیچنگ ہسپتال لے جایا گیا ۔

ہسپتال میں مریضوں کیلئے کھانا لانے اور کھلانے کی تصاویر
یہ بھی پڑھیں:  پیپلز پارٹی نے ہر فورم پر کشمیریوں کی آواز اٹھائی، آج بھی یہ سلسلہ جاری ہے:بلاول بھٹو زرداری