نجی چینلز پر بھارتی مواد کی تشہیر نہیں ہوگی: سپریم کورٹ

EjazNews

سپریم کورٹ میں جسٹس گلزار احمد کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے نجی ٹی وی چینلز پر غیر ملکی مواد دکھانے کے معاملے کی سماعت کی اور اس سلسلے میں پیمرا کے وکیل عدالت میں پیش ہوئے۔سپریم کورٹ نے وفاقی حکومت کی 19اکتوبر 2016ء کی غیر ملکی مواد نہ دکھانے کی پالیسی بحال کرتے ہوئے لاہور ہائی کورٹ کا فیصلہ معطل کر دیا، جس کے تحت کسی بھی نجی چینل پر بھارتی مواد کی تشہیر نہیں ہوگی۔
دوران سماعت جسٹس گلزار احمد نے استفسار کیا اب بھی لوگ بھارتی مواد دیکھنا چاہتے ہیں؟ جس پروکیل پیمرا نے بتایا 2006ء میں بھارت پر 10فیصد غیر ملکی مواد نشر کرنے کی پالیسی آئی اور بھارتی مواد کی نشریات پاکستانی مواد بھارت میں تشہیر کرنے سے مشروط تھی، بھارت میں پاکستانی مواد تشہیر کرنے کی پابندی ہے، جس کے باعث پاکستان میں بھی پابندی عائد کی گئی ۔
عدالت نے کیس کی مزید سماعت غیر معینہ مدت کے لیے ملتوی کر دی ۔

یہ بھی پڑھیں:  پرویز مشرف نے 40سال سے ز ائد پاکستان کی خدمت کی، کسی صورت غدار نہیں ہوسکتے: ڈی جی آئی ایس پی آر