indian air

27فروری 2019ءکی بھیانک رات کیا ہونے والا تھا

EjazNews

پلوامہ حملہ ایک مضموم سازش تھی۔ جس کو کامیاب کرنے کے لیے ہر ممکنہ کوشش کی گئی۔ حتی کہ 27فروری کو بھارت اور اسرائیل پاکستان پر حملے کی منصوبہ بندی کر رہے تھے۔پاکستان کی انٹیلی جنس ایجنسیوں کو حملے کی تیاری کا علم ہوگیا تھا۔جس کے بعد پاکستان نے بتا دیا تھا حملہ کیا تو بھرپور جواب دیں گے۔اے آر وائی پر نشر ہونے والی ایک رپورٹ کے مطابق بھارت نے پاکستان پر جنگ مسلط کرنے کی کوشش کی تھی، جنگ مسلط کرنے کی کوشش میں بھارت کیساتھ اسرائیل اور ایک اور ملک بھی شامل تھا۔حکومتی ذرائع کے مطابق بھارت نے راجھستان کی جانب سے حملے کامنصوبہ بنایا تھا ۔ اطلاعات کے بعد پاکستان نے بھارتی منصوبہ بندی سے متعلق بھارت کو آگاہ کیا تھاا ور حملے کی منصوبہ بندی کا علم ہونے کے بعد ائیر اسپیس بند کر دی تھی اور پاکستان کی جانب سے طیارے گرانے کے بعد واضح پیغام دیا گیا کہ حملہ ہوا تو منہ توڑ جواب دیا جائے گا۔اسرائیل کی کوشش ہے پاکستان کے ایٹمی اثاثوں کو نقصان پہنچایا جائے۔

یہ بھی پڑھیں:  ہم اپنے قائد نواز شریف کی ہدایت کے مطابق 31اکتوبر کو اسلام آباد میں جلسہ کریں گے: میاں شہباز شریف

حکومت ذرائع کا کہنا تھا بالا کوٹ میں بھارتی دراندازی کے بعد پاکستان نے صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا اگلے روز دوبارہ دراندازی کی صورت میں واضح دواب دیا گیا جبکہ پاکستان کی جانب سے بھارتی پائلٹ کی رہائی کے اقدام کو عالمی سطح پر سراہا گیا۔ ذرائع نے بتایا پاکستان مختلف تنظیموں کو غیر مسلح کرکے قومی دھارے میں شامل کرنے کا فیصلہ کر چکا ہے ، بھارت کی جانب سے پلوامہ حملوں کے ڈوزئیر میں کوئی ایکشن ایبل ثبوت نہیں ، پلوامہ حملے میں کوئی نان اسٹیٹ ایکٹر تک شامل نہیں تھا۔ حکومتی ذرائع نے کہا بھارت کی پلوامہ حملے کراکے ملبہ پاکستان پر ڈالنے کی منصوبہ بندی تھی، عالمی برادری نے کشیدگی کم کرنے میں پاکستان کے کر دار کی تعریف کی اور عالمی سطح پر پاکستان کا امیج بہتر ہو رہا ہے ۔
ذرائع کا کہنا تھا کہ راجھستان کے راستے پاکستان پر حملے کیساتھ میزائل حملوں کا بھی منصوبہ تھا میزائل حملوں میں پاکستان کے 8سے 9مقامات کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی تھی۔ پاکستان کی جانب سے بھی جواباً9سے زائد مقامات کو ٹارگٹ کرلیا گیا تھا۔
پاکستان کو دشمن کے ناپاک عزائم کی انٹیلی جنس معلومات مل چکی تھیں پاکستان کو بعض دوست ممالک نے بھی انٹیلی جنس معلومات فراہم کیں، بھارت کی جانب سے کراچی اور بہاولپور ٹارگٹ تھے۔ ذرائع نے مزید کہا بھارت پاکستان کے ائیر بیسز کو نشانہ بنانے کی منصوبہ بندی کر رہا تھا بھارت کی جانب سے کراچی اور بہاولپور ٹارگٹ تھے، بھارت کیساتھ اسرائیل اور ایک عالمی طاقت بھی شامل تھی۔
واضح رہے 27فروری کو پاکستان نے فضائی حدود کی خلاف ورزی پر بھارت کے دو طیارے مار گرائے تھے اور پائلٹ ابھینندن کو گرفتار کر لیا تھا، جس کے بعد بھارت نے بھی طیاروں کی تباہی اور پائلٹ لاپتہ ہونے کا اعتراف کیا تھا۔
ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا تھا بھارتی طیارے پاکستانی حدو د میں نشانہ بنائے، ایک طیارہ آزاد کشمیر اور دوسرا مقبوضہ کشمیر کی حدود میں گرا تھا۔

یہ بھی پڑھیں:  منظم دہشت گردی