بلوچستان میں طوفانی بارشیں

EjazNews

بلوچستان کے مختلف علاقوں میں طوفانی بارشوں اور سیلابی ریلوں نے بہت سے مکانات کو نقصان پہنچایا ہے اور کچھ قیمتی جانیں بھی ضائع ہوئی ہیں۔ قلعہ عبداللہ کے قریب قومی شاہراہ پر پل ریلے میں بہہ گیا، چمن ، پشین، ہرنائی ژوب، لورالائی، قلعہ سیف اللہ میں نالے بپھر گئے۔ چاغی میں 6سو فٹ سے زائد ریلوے ٹریک بہہ جانے سے پاک ایران ریلوے سروس معطل ہو گئی ہے۔خضدار، لسبیلہ، اور اوتھل میں سیلابی ریلے نے حب ڈیم کی طرف اپنا رخ کر لیا ہے اور حب ڈیم میں پانی کی سطح میں مزید 10سے 20فٹ اضافہ کا امکان ہے۔ جبکہ بلوچستان کے مشرقی حصے میں برف باری کا سلسلہ جاری ہے اور یہ برف باری پچھلے 15سال سے زائد ہے۔ دوسری طرف محکمہ موسمیات نے پیشن گوئی کی ہے کہ مارچ کے پہلے ہفتے تک ملک کے بیشتر علاقوں میں برفباری اور بارش کا سلسلہ جاری رہے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا ریجنل الیکشن کمیشن وزیراعظم کو نوٹس جاری کر سکتا ہے؟