بھارتی پائلٹ کی امن کیلئے رہائی، سوشل میڈیا کیا کہتا ہے

EjazNews

جیت گئے امن والے اور ہار گئے زہر پھیلانے والے، سوشل میڈیا پر چار سو سے وزیراعظم عمران خان کو سراہا جانے لگا۔ ان کے اس اقدام کی تعریفوں کے پل باندھے جانے شروع ۔
وزیراعظم عمران خان نے پاک بھارت کشیدگی کے خاتمے اور دونوں ممالک کے درمیان امن قائم کرنے کے لیے گزشتہ روز پاکستانی حدود سے گرفتار ہونے والے بھارتی پائلٹ کی رہائی کا حکم دیا ہے۔بھارتی پائلٹ کو واہگہ کے راستے بھارت بھیجا جائے گا۔
مقبوضہ کشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے عمران خان کے فیصلے کو سراہتے ہوئے کہاکہ پاکستان کا اقدام مفاہمتی پیغام ہے جس کا ہندوستان کی سیاسی قیادت کو بھی مثبت جواب دینا ہوگا۔ان کا کہنا تھا کہ ہندوستان کی سیاسی قیادت کا فرض ہے وہ کشیدگی کو ختم کرنے کیلئے پاکستان کی طرح اقدامات کرے۔جبکہ میر واعظ عمر فاروق کہتے ہیں اس اقدام کی وجہ سے جنگ کے بادل چھٹیں گے اور کشمیر کا حساس مسئلہ بھی پر امن طریقے سے حل ہوگا۔جمائما خان نے بھارتی پائلٹ کی رہائی کے اقدام کو زبردست اقدام قرار دے دیا۔
کرکٹر سرفراز احمد کہتے ہیں ہم امن پسند قوم ہیں اور بڑے دل کے مالک بھی۔ ہمیں اپنے وزیراعظم پر فخر ہے۔میرا چوپڑا کہتی ہیں میں عمران خان کی بڑی عزت کرتی ہوں۔ صحافی مظہر عباس کہتے ہیں اگر عمران خان افغانستان میں بھی امن قائم کرنے میں کامیاب ہو گئے تو وہ نوبل انعام کے مضبوط کینیڈیٹ ہوں گے۔اداکارہ عروہ حسین کہتی ہیں میں اپنے وزیراعظم پر فخر کرتی ہوں ۔سدھیشن کلکرنی کہتے ہیں وزیراعظم عمران خان امن قائم کرنے والے آدمی ہیں ۔میری دعا ہے آپ اور نریندر مودی جی نیا انڈیا اور نیا پاکستان بنانے میں کامیاب ہو جائیں۔ اداکارہ پریتی زنٹا کہتی ہیں پاکستان اور انڈیا کو دہشت گردی، جہالت اور غربت کے خلاف لڑنا چاہئے۔ انورا گ باسو کہتے ہیں ان لڑائیوں سے امریکہ، روس اور چائنہ کو فائدہ ہوتا ہے ان کے اسلحہ کی فیکٹریاں چلتی ہیں۔مظفر زیدی کہتے ہیں میں بتا نہیں سکتا اس وقت میری فیلنگ کیا ہیں میں آج فخر کرتا ہوں خود پہ اپنے ملک پہ۔ اسد عمر کہتے ہیں آج نماز کے بعد ملک کی سلامتی کی دعا بھی کریں گے اور خصوصی دعا افواج پاکستان کے ان بہادر بیٹوں کے لئے جن مجاہدوں کی وجہ سے ہم سکون کی نیند سوتے ہیں۔اس کے باوجود کہ جنگی جنون سے سرشار بھارتی لیڈر شپ امن کو تباہ کرنے کی کوشش میں لگی ہوئی ہے ۔ پاکستان زندہ باد، افواج پاکستان زندہ باد۔فہد مسعودکہتے ہیں تاریخ یہ یاد نہیں رکھے گی کہ انڈین میڈیا کیا کہتا رہا ہے۔ تاریخ یاد رکھے گی کہ حقیقت میں کیا ہوا۔ عمران خان کا یہ عظیم کارنامہ ہے امن کے لیے ۔ انڈیا کے سابق چیف جسٹس مرکنڈے کاٹجو کہتے ہیں میں وزیراعظم عمران خان کا پرستار ہو گیا ہوں۔

یہ بھی پڑھیں:  کیا آپ جانتے ہیں دنیا بھر میں روز کتنی ای میلز کی جاتی ہیں؟