اسلام آباد ہائی کورٹ نے سابق وزیر اعظم کی درخواست ضمانت مسترد کر دی

EjazNews

اسلام آباد ہائی کورٹ میں ڈویژن بینچ پر مشتمل جسٹس عامر فاروق اورجسٹس محسن اختر کیانی نے سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبی بنیادوں پر ضمانت پر رہائی کی درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے نواز شریف کی درخواست ضمانت مسترد کر دی۔
مسلم لیگ ن کے رہنما شاہد خاقان، خواجہ آصف ، میاں ابرار، طلال چوہدری سمیت ن لیگی کارکنان کی بڑی تعداد بھی عدالت پہنچ گئی ہے۔ اس موقع پر اسلام آباد ہائی کورٹ میں سکیورٹی سخت انتظامات کئے گئے ہیں اور اسلام آبادپولیس کے اضافی دستے اور سادہ لباس میں ملبوس اہلکار تعینات ہیں۔
نواز شریف نے طبی بنیادوں پر ضمانت دینے کی درخواست کی تھی جس پر جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل دورکنی بینچ نے دلائل کےبعد بیس فروری کو فیصلہ محفوظ کر لیاتھا۔

یہ بھی پڑھیں:  73سال کی تاریخ میں کسی منتخب وزیراعظم کو آئینی مدت پوری نہیں کرنے دی گئی، ہر آمر نے ملک میں اوسطاً 9 سال غیرآئینی طور پر حکومت کی:میاں نواز شریف