کراچی میں ایک اور افسوسناک واقعہ

EjazNews

شہر قائد میں مضر صحت کھانا کھانے سے ایک ہی خاندان کے 5بچے جاں بحق ہو گئے ،فیملی صدر کے ایک گیسٹ ہاﺅس میں مقیم تھی۔ فیملی کوئٹہ سے کراچی میں آئی تھی۔ فیملی نے صدر کے ایک نجی ریسٹورنٹ سے کھانا کھایا تھا۔

جاں بحق بچوں میں ڈیڑھ سال کا عبد العلی، 4سال کا عزیز فیصل، 6سال کی عالیہ،7سال کا توحید، 9سال کی صلوی شامل ہیں جبکہ کھانے سے متاثرہ 28سال کی بینا ہسپتال میں زیر علاج ہے۔پولیس کی تفتیش جاری ہے۔ متاثرہ فیملی نے خضدار میں گزشتہ روز لنچ کیا تھا۔

ڈی آئی جی ساﺅتھ کا کہنا ہے کہ فرانزک ٹیم کو شاہد جمع کرنے کے لئے بلالیا گیا ہے۔ کھانا کھانے سے اموات ہوئیں توکھانا کہاں سے آیا تھا چیک کر رہے ہیں۔ کھانا ہوٹل سے منگوایا یا باہر سے کچھ کہنا قبل از وقت ہے۔

اس سے قبل بھی نومبر 2018ءمیں کلفٹن کے ایک نجی ریسٹورنٹ میں زہریلا کھانا کھانے سے 5سالہ محمد اور ڈیڑھ سالہ احمد جاں بحق ہوگئے تھے۔

یہ بھی پڑھیں:  خواب میں مکی آرتھر سے ملاقات ہوئی اور انضمام الحق کی کال آئی تھی: وہاب ریاض