shinin-beads

چمکتے دمکتے موتیوں سے گھر کو خوبصورت بنائیں

EjazNews

گھر کیسا بھی ہو لیکن دن بھر کی تھکن، پریشانیوں ، مسائل اور تکالیف کا سامنا کرنے کے بعد ہم گھر کا ہی رخ کرتے ہیں اور گھر ایک مہربان ماں کی طرح اپنی آغوش ہم پر وا کر دیتا ہے۔ گھر کے دروازے سے اندر داخل ہو کر ہم جس اطمینان قلب کو محسوس کر تے ہیں وہ کسی دوسری صورت کرنا ممکن نہیں اورگھر ہمیشہ گھر والوں سے بنتا ہے اور گھر والی سے سجتا ہے۔
اگر گھر والی اپنے گھر کوسجا کر رکھے تو گھر والوں کو اپنے گھر سے زیادہ کوئی جگہ اتنی مسرت عطا نہیں کرتی جتنا گھر عطا کرتا ہے۔ گھر سجانے کا فن اگرچہ کمرشلائز ہو چکا ہے ۔بڑے بڑے ادارے اس فن کے اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد کو اس کام کیلئے رکھتے ہیں کہ وہ گھروں کو سجا سکیں۔ یہ فن اب ایک بزنس بن چکا ہے۔ لیکن فن چاہے شوقیہ ہو یا بزنس کیلئے دونوں صورتوں میں قابل داد و تحسین ہوتا ہے۔ گھر سجانے کیلئے ضروری نہیں کہ آپ اعلیٰ تعلیم یافتہ افراد یا اداروں سے رابطہ کریں۔ آپ خود اپنے ذوق آرائش اور ذوق نظر کو کام میں لا کر خود بھی یہ کام انجام دے سکتی ہیں۔ بس خواہش ہونی چاہیے اور ہمارے خیال میں شاید ہی کوئی خاتون ایسی ہو جسے اپنا گھر خوبصورت رکھنے اور سجانے کی خواہش نہ ہو۔
گھر سجانے کیلئے ایک بات ہمیشہ ذہن میں رکھنی چاہیے کہ گھر چاہے دو کمروں کا ہویا دس کمروں کا یا فلیٹ ہو، اس میں سنگ مرمر کا فرش ہو یا محض کھلا ہوا آنگن ہو ، اس میں قیمتی کھڑکی دروازے لگے ہو ں یا معمولی قسم کی تعمیراتی اشیاء استعمال کی گئی ہو ں، گھر کی سجاوٹ محض آپ کے ذوق اور سلیقہ کی بدولت ممکن ہے اور سلیقہ یا ذوق کسی قسم کی قیمت دے کر نہیں محض دل کی خواہش سے حاصل ہوتا ہے۔
اگر گھر سجانا مقصود ہو تو جہاں آپ اور بہت سی اشیاء استعمال کرتی ہیں وہیں آج ایک ایسی چیز پر نظر ڈالئے جسے آپ اپنے ذوق جمال اور ہنر مندی کو کام میں لاکر اپنے گھر کی خوبصورتی میں چار چاند لگا سکتی ہیں۔ یہ چیز ہے بازار میں عام ملنے والے ہر طرح کے رنگ برنگے ہر سائز کے موتی ۔ موتی خواہ کسی بھی شکل ، انداز، رنگ اورسائز کے ہوں خوبصورت ہوتے ہیں۔ دیکھنے میں بھی بھلے لگتے ہیں اور اگر ذرا فنکاری سے استعمال کئے جائیں تو آپ کے گھر کے ہر حصے میں موتیوں سے بنی اشیاء کی سجاوٹ آپ کو گھر میں سب کی نظر میں ہر دلعزیز بنا دے گی۔
سب سے پہلے دیکھئے کہ گھر کے ایسے دروازے جن پر چوکھٹ موجود نہ ہو وہاں موتیوں کی جھالروں سے پردہ لٹکا جاسکتا ہے جو دیکھنے میں انتہائی دیدہ زیب محسوس ہوتا ہے اور اگرہر جھالر کے نچلے سرے پر چھوٹی چھوٹی گھنٹیاں لگا دی جائیں تو ان کی دھیمی دھیمی سریلی آواز آپ کو مسرور کر ے گی۔ اس قسم کے جھالر والے پردوں میں خیال رہے کہ بڑے اور چھوٹے موتیوں کا تناسب تین اور چھ کا ہونا زیادہ بہتر ہے یعنی اگر چھ موتی چھوٹے استعمال ہوئے ہوں تو تین موتی بڑے رکھئے اور بڑے موتیوں کا رنگ مختلف ہو لیکن چھوٹے موتی یکساں سائز اور رنگ کے ہونے چاہئیں تاکہ جھالر بھاری پن کی بجائے نزاکت اور فن کا تاثر پیش کرے۔
دروازوں پر عموماً ہمارے یہاں سجاوٹ نہیں کی جاتی ۔ اگر آپ کا دروازہ اس طرز کابنا ہوا ہے کہ اس پر پہلے ہی خاصا بڑا ڈیزائن ہے تو آپ اپنے دروازے کے کسی مخصوص حصے کو جو چوکور ہو یا لمبائی ہو یا تکونی صورت میں ہو، منتخب کیجئے۔ ایک لکڑی کا ہموار لمبا ٹکڑا لیجئے۔ اب اپنی پسند کے کچھ موتی منتخب کر کے دھاگوں میں پرو کر اس ٹکڑے میں باندھ دیجئے۔ دھاگوں کا سائز منتخب کر دہ ٹکڑے کی شکل کا رکھئے۔ جتنے موتی آپ چاہیں استعمال کر یں لیکن خیال رہے کہ موتی چھوٹے ہوں اور چمکدار ہوں۔ اگر دروازہ گہرے رنگ کا ہے تو موتی ہلکے رنگ کے رکھیں اور اگر دروازہ ہلکے رنگ کا پینٹ کیا گیا ہے تو موتی گہرے رنگ کے رکھئے۔ ایسے دو سیٹ بنا کر اپنے دروازے کے مخصوص ٹکڑوں پر آویزاں کر دیجئے۔
ہرگھر میں گلدان استعمال ہوتے ہیں ۔ گلدانوں میں پھول سجائے جاتے ہیں جو خوشی اور مسرت کے ساتھ ساتھ اطمینان کا باعث ہوتے ہیں اگر آپ کے یہاں سادہ رنگوں کے گلدان چھوٹے یا بڑے کسی بھی سائز کے ہیں تو ایک دھاگے میں کچھ موتی نیلے، ہرے، گلابی جامنی یا جو رنگ آپ کو پسند ہو پرو کر گلدان کی گردن پر باندھ دیجئے۔رائٹنگ ڈیسک،بیڈروم کا سرہانہ یا ڈرائنگ روم کی سینٹر ٹیبل کے گلدان خصوصاً اس آرائش سے منفرد ہو کر آپ کے خوش ذوق ہونے کی دلیل بن سکتے ہیں۔
کھڑکیوں کو فراموش مت کریں۔ کپڑے کے رنگین ٹکڑوں پر نفاست سے موتی ٹانکئے اور کھڑکیوں کی گرل کے کناروں پر لمبائی یا گول صورت میں آویزاں کر دیجئے بہت بھلے معلوم ہوں گے۔
گھر کے ان کونوں پر ذرا نظر ڈالیے جو عموماً توجہ سے دور رہتے ہیں۔ ان کونوں میں لمبائی ، چوکور یا دائروں کی صورت میں موتیوں کی بنی اشیاء سے سجاوٹ کریں۔ کپڑے کے ٹکڑوں پر مختلف سائزوں کے اور اگر ہو سکے تو ملٹی شیڈ موتی ٹانک کر لٹکا دیجئے۔ پلاسٹک کی رنگ میں نائیلون کے تاروں میں موتی پرو کر لٹکا ئیے یا کسی پلاسٹک یا کپڑے کے لمبے فیتے سے مختلف موتی لٹکا کر آویزاں کر دیجئے خیال رہے کہ ان موتیوں کو وقتاً فوقتاً کسی بھی اچھے واشنگ پائوڈر میں ڈال کر دھونا ضرور چاہیے تاکہ ان کی چمک برقرار رہے۔

یہ بھی پڑھیں:  مان بڑھائے گھر کا ، فرش بنے ٹائلز

اپنا تبصرہ بھیجیں