pic-Wakeel

انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی پر کیے جانے والا ہلہ (حملہ) کیمرے کی آنکھ سے

EjazNews

لاہور کے انسٹی ٹیوٹ آف کارڈیالوجی میں ہونے والا وکلاء کا حملہ پاکستان کی تاریخ کا بدترین واقعہ ہے۔ اس میں قیمتی جانوں کا بھی ضیاع ہوا۔ ملک وقوم کا نقصان بھی ہوا ہے اور اس کے بعد ہمارے سنجیدہ طبقے کا رویہ بھی سامنے آیا کہ وہ کیا کر رہے ہیں۔

اس تباہی کا ذمہ دار کون ہوگا کیونکہ جس ویڈیو کی وجہ سے وکیلوں نے ہلہ بولا وہ تو ڈاکٹر نے بنائی تھی لیکن یہ سارا نقصان تو ملک و قوم کا ہے
یہ پی آئی سی کے اندر کا منظر ہے کہ کس بیدردی سے کرسیوں کو اکھاڑا گیا ہے اور تباہی پھیلائی گئی ہے
توڑ پھوڑ کرنے والے پڑھے لکھے لوگوں نے اس بات کا بھی خیال نہیں رکھا کہ خدارا یہاں پر مریض لیٹے ہوئے ہیں بیڈز بھی توڑ دئیے گئے
شیلنگ کے بعد وکلاء باہر کی طرف دوڑتے ہوئے
ایک وکیل شیلنگ کے گولے کو اندر کی طرف پھینکتے ہوئے
ایک وکیل کو گرفتار کر کے لیجایا جارہا ہے
ایک وکیل زخمی حالت میں گاڑی کے اندر بیٹھا ہے جبکہ دوسری تصویر میں وکیلوں کو گرفتار کیا جارہا ہے
یہ بھی پڑھیں:  آئیے میلہ چراغاں کو کیمرے کی نظر سے دیکھتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں