mehvis

کیا اب ہمارے عمرے بھی دکھلاوے کے ہوں گے

EjazNews

کیا ہمارے حج اور عمرے بھی اب شوبز سرگرمیوں کی طرح ہو گئے ہیں کہ وہاں جا کر بھی ہم سیلفیاں بنانا اور اسے انٹرنیٹ پر پوسٹ کرنا نہیں بھولتا۔ عمرہ کرنے کیلئے ہم اس لیے جاتے ہیں کہ ہم خدا کے حضور جا کر اپنے گناہوں کی معافی مانگیں اور آئندہ سے کوئی ایسا کام نہیں کریں گے جس سے میرا اللہ ناراض ہو جائے۔ لیکن ہماری شوبز کی ہستیاں وہاں جا کر پورے اینگل کے ساتھ تصاویر بنا کر شئیر کرتی ہیں جس پر طرح طرح کے لوگ عجیب وغریب کمنٹس کرتے ہیں۔

مہوش حیات اکیلی نہیں ہیں جنہوں نے خانہ کعبہ اور مسجد نبوی میں جا کر بھی ٹویٹر اور انسٹا گرام کو نہیں چھوڑا۔ ان کے علاوہ بھی بڑی ہستیاں ہیں جو ایسی سرگرمیوں سے باز نہیں رہتے۔ عامر لیاقت حسین رمضان ٹرانسمیشن کی وجہ سے مذہبی شخصیت کے طور پر مشہور ہیں لیکن جب وہ بھی اپنی دوسری بیوی کے ساتھ عمرہ کرنے گئے تو انسٹا گرام پر سیلفیاں شئیر کرنا نہیں بھولے۔

یہ بھی پڑھیں:  شکریہ ہفتے والے دن نفرت کرنے کا اوربدھ والے دن پیار دینے کا: عائزہ خان

حج اور عمرہ بڑے مقدس فریضے ہیں۔ اس میں دکھلاوا کرنے کی بجائے آپ اپنے رب کے حضور اگر سجدہ ریز رہیں تو کیا ہی اچھی بات نہ ہو گی۔ چار دن اگر آپ سوشل میڈیا سے غاِئب رہیں گی تو آپ کی شہرت ختم نہیں ہو جاتی۔

ریحانہ

اپنا تبصرہ بھیجیں