eye-weakness

نظر کی کمزوری کیسے دور کی جائے؟

EjazNews

آنکھوں کی بینائی عمر بڑھنے کے ساتھ کمزور ہونے لگتی ہے اور عینک لگ جاتی ہے۔ تا ہم اپنی نظر کو اچھا رکھنا بہت ضروری ہے۔ ہو سکتا ہے کہ یہ کام مشکل محسوس ہو مگر ایسا ہے نہیں بلکہ چند عام نکات کو اپنا کر آپ اپنی بینائی کو عمر بڑھنے کے باوجود بہتر رکھ سکتے ہیں۔ کہتے ہیں کہ احتیاط علاج سے بہتر ہے۔ جب آپ اپنے اندر درج ذیل علامات پائیں تو فوری طور پر معالج سے رجوع کریں۔

آنکھوں میں درد: ہماری آنکھیں ایک لینس کے طور پر کام کرتی ہیں ، جو مختلف فاصلوں پر موجود اشیاکو دیکھنے کے لیے خود کو ایڈجسٹ کرتی ہیں لیکن جب آپ کو کچھ دور موجود چیزوں کو دیکھنے میں مشکل پیش آئے تو آنکھوں کو کچھ زیادہ محنت کرنا پڑتی ہے، جس کے نتیجے میں ان میں درد، تھکاوٹ ، پانی بھر آنا یا خشک ہونے جیسی علامات سامنے آتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ہمارے خطے میں سردیوں میں اموات کیوں زیادہ ہوتی ہیں؟

سردر در بنا: آنکھوں میں دبائو یا تنائو سر درد کا باعث بن جاتا ہے، کیونکہ آنکھوں کو اپنا کام کرنے کے لیے زیادہ محنت کرنا پڑتی ہے جس کے نتیجے میں آنکھوں کے آس پاس درد تھکاوٹ پانی نکلنا ہے، خاص طور پر کوئی کتاب پڑھنے کمپیوٹر پر کام کرنے یا کسی بورڈ کو دیکھتے وقت۔ تیز روشنی میں دیکھنا مشکل؛ تیز روشنی میں گھومتے ہوئے اگر آنکھوں میں چبن ہونے لگے تو اس کا مطلب ہے کہ بینائی میں خرابی آرہی ہے، کیونکہ یہ تیز روشنی آنکھوں کو سکڑنے پر مجبور کر دیتی ہے، جس کے نتیجے میں انہیں زیادہ کام کرنا پڑتا ہے۔

اسکرین کا استعمال کم کریں: فون یا کمپیوٹر کی اسکرین کے استعمال کا دورانیہ بھی بینائی پر اثر انداز ہوسکتا ہے
ایک دن میں مسلسل دو گھنٹے یا اس سے زائد وقت ڈیجیٹل اسکرین کو دیکھتے ہوئے گزارنا ڈیجیٹل آئی اسٹرین کا باعث بن سکتا ہے۔ اس کے نتیجے میں آنکھوں میں سرخی ، خارش ، خشک ہو جانا، دھند کا نام تھکاوٹ اور سر درد وغیرہ کی شکایات ہوسکتی ہیں۔ اس سے بچنے کیلئے ضروری ہے کہ اسکرین کے استعمال میں وقفہ دیں۔

یہ بھی پڑھیں:  وہم چھوڑیں صحت اپنائیں

تمباکو نوشی سے گر یز: تمباکو نوشی سے عمر بڑھنے کے ساتھ بینائی میں آنے والی تنزلی اور بصری اعصاب کو نقصان پہنچتا ہے۔ اس کے علاوہ ذیباطیس کی بیماری بھی آنکھوں کے مسائل کا سبب بنتی ہے۔

چیک اپ کراتے رہیں: آنکھوں کی صحت کے لیے ضروری ہے کہ ان کا چیک اپ کرانا معمول بنالیں۔ ماہرین کے مطابق ایسے حالات میں دماغ دو الگ الگ تصاویر دیکھتا ہے اور اس کے لیے انہیں اکٹھا کرنا مشکل ہوتا ہے، ایسا ہونے پر آپ کو تھے ، ایک چیز دونظرا آنا یا سر چکرانے کی شکایات ہوسکتی ہیں۔

بینائی تیز کرنے کیلئے مفید غذائیں: بینائی قدرتی کی انمول نعمت ہے، جس کی حفاظت ہم درج ذیل غذائیں کھا کر بھی سکتے ہیں۔

جنڈی: جنڈی میں بیسن اور پروٹین جیسے مرکبات موجود ہوتے ہیں ، جو بینائی کو بہتر بنانے میں مددگار ثابت ہو سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ جنڈی میں وٹامن سی کی مقدار بھی بہت زیادہ ہوتی ہے، جو آنکھوں کی صحت کے لیے موثر ہے۔ خوبانی بڑھتی عمر میں بینائی کمزور ہو جاتی ہے لیکن ڈاکٹر ز کا ماننا ہے کہ بیٹا کیروٹین بینائی کو بہتر رکھنے میں مددگار ثابت ہوتا ہے۔ یہ بھی کہا جاتا ہے کہ روزانہ وٹامن سی ، وٹامن ای ، زنک اور کاپر سے بھر پور غذائیں کھانے سے بینائی بہتر ہوتی ہے۔ یہ تمام غذائیت خوبانی میں موجود ہے، اس سے دھندلی بینائی کا خطرہ 25 فیصد تک کم ہوجاتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  دانتوں کی حفاظت کیجئےبہتر صحت کیلئے

گاجر : گاجر میں وٹامن اے موجود ہوتا ہے جو آنکھوں کی جھلی اور دیگر حصوں کو بہتر کام کرنے میں مدد دیتا ہے، گاجر کا روزانہ استعمال بینائی کو بھی بہتر بناتا ہے۔

کیٹاگری میں : صحت

اپنا تبصرہ بھیجیں