Economy

ملکی معیشت میں بہتری کی عالمی تصدیق اور پاکستان کا متوسط طبقہ

EjazNews

پاکستان کی معاشی ترقی کے حوالے سے گاہے بگاہے اچھی خبریں آرہی ہیں۔ گزشتہ دنوں ایشیاء میں سب سے زیادہ اپنے ملک کے اندر اصلاحات کرنے کی وجہ سے پاکستان کی 28درجوں میں بہتری آئی اور اس کی تصدیق عالمی اداروں نے کی۔ اس کے بعد اب موڈیز کی جانب سے بھی اچھی خبریں موصول ہو رہی ہیں۔ معیشت کو مستحکم بنیادوں پر کھڑا کرنے میں وقت ضرور درکار ہوگا۔ لیکن ملک میں موجود مہنگائی کے طوفان کو کم کرنے کی بھی اشد ضرورت ہے۔
وزارت خزانہ کے مطابق حکومت مستقبل میں تیز تر، پائیدار اور یکساں معاشی ترقی کو مضبوط بنیادوں پر استوار کرنے کے لیے معاشی اصلاحات کے ایجنڈے پر گامزن رہے گی۔
وزیراعظم کے مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے موڈیز کی جانب سے پاکستان کے آؤٹ لک کو مستحکم قرار دئیے جانے کی خبر کوٹویٹ کیا ہے۔لکھتے ہیں یہ پیش رفت حکومت کی جانب سے ملک کی معیشت کے حوالے سے اٹھائے جانے والے کامیاب اقدامات اور مضبوط طویل مدتی ترقی کے لیے بنیاد فراہم کرنے کی عکاس ہے۔اس بات کی پاکستانی حکومت کو تصدیق کی گئی ہے کہ ملک میں طویل جاری کی جانے والی مقامی اور غیر ملکی کرنسی اور غیر محفوظ قرضوں کی درجہ بندی بی تھری اور آؤٹ لک کو منفی سے مستحکم کردیا گیا ہے۔
ملکی معیشت میں بہتری کی خبریں اچھی ہیں اور اس سے ہر پاکستانی کو خوشی ہوتی ہے کہ اس کے ملک میں بہتری آرہی ہے جس سے اس کی زندگی بھی آسان ہوگی ۔ ان عالمی اداروں کی جانب سے معیشت میں بہتری کی تصدیق پر مہر صرف اس وقت لگ سکتی ہے جب عام آدمی کے حالات زندگی میں کچھ بہتری آئے گی۔ کیونکہ اس وقت مہنگائی کے طوفان میں سب سے زیادہ متوسط طبقہ پس رہا ہے ایسا طبقہ جو ملک کی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔
موڈیز کے جاری بیان میں بتایا گیا کہ آؤٹ لک میں یہ تبدیلی ادائیگیوں میں توازن، پالیسی ایڈجیسمنٹ کی حمایت اور کرنسی کی لچک کے باعث سامنے آئی ہے۔اگرچہ غیر ملکی زرمبادلہ کے ذخائر میں کمی آئی اور اس کو دوبارہ سے مستحکم کرنے میں وقت لگے گا لیکن اس طرح کے اقدامات بیرونی خطرات کو کم کرنے میں مدد فراہم کریں گے۔ کرنسی کی قدر میں کمی کے نتیجے میں ملک کے مالیاتی امور زیادہ تر قرضوں کی سطح کے ساتھ کمزور ہوئے ہیں جبکہ آئی ایم ایف پروگرام کے ذریعہ پاکستان کی جاری مالی اصلاحات قرضوں کے استحکام اور حکومتی لیکویڈیٹی سے متعلق خطرات کو کم کردیں گی۔
پاکستانی معیشت میں استحکام بہت اچھی بات ہے اور ہونا بھی چاہیے۔ اس سے ہر پاکستانی خوش ہے اور اپنی خوشی کا الگ الگ انداز سے اظہار کر رہا ہے۔ پھر وہی بات اس وقت تک یہ غیر ملکی خبریں مفروضوں سے زیادہ نہیں ہوں گی جب تک عام آدمی کو بہتری آتی ہوئی نظر نہیں آئے گی۔ خزانہ بھرا ہونا ضرور چاہئے ۔ لیکن ٹیکس نیٹ ورک میں پسنے والے عام صاف کا خیال بھی حکومت کو اپنی اولین ترجیحات میں کرنا چاہئے۔

یہ بھی پڑھیں:  دنیا کو جیت لینے والے الفاظ

اپنا تبصرہ بھیجیں