studen-solidarity

جب لال لا ل لہرائے گا ہوش ٹھکانے آئے گا

EjazNews

ملک بھر میں طلبہ نے پہلی دفعہ اتنی بڑی سطح کے مارچ، مظاہروں کا انعقاد کیا۔ لاہور میں بھی اس احتجا ج کو منعقد کیا گیا جس میں طلبہ و طالبات کے ساتھ ساتھ عام شہریوں نے بھی شرکت کی اور اپنے جذبات کا اظہار کیا۔ طلبہ سٹوڈنٹ یونین بحالی کا مطالبہ بھی کر رہے تھے۔

لاہور میں ہونے والے سٹوڈنٹس مارچ میں غنویٰ بھٹو نے بھی شرکت کی
اپنے مطالبات کے لیے پلے گارڈ اٹھائے ہوئے طالب علم
مارچ میں جوش دیدنی تھا
مارچ میں شرکت کے اپنے اپنے طریقے ہوتے ہیں
جہاں پر مارچ میں جوش و جذبہ عروج پر تھا وہی پر موبائل فون بھی کچھ لوگوں کو حیرت زدہ کر رہا تھا
طلبہ کے ساتھس اتھ عام شہریوں نے بھی اس مارچ میں شرکت کی
ریلی میں طلبہ و طالبات کی کثیر تعداد شریک ہوئی
یہ بھی پڑھیں:  یہ جوش و جذبہ بیش قیمت ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں