molana-apc

وزراء کے بیانات نے سی پیک جیسے اہم منصوبے کو متنازع بنا نے کی کوشش کی:مولانا فضل الرحمن

EjazNews

جمعیت علمائے اسلام (فضل الرحمن) گروپ کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد میں آل پارٹیز کانفرنس کے بعد تمام جماعتوں کے نمائندوں کے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئےکہا کہ وزرا کے بیانات نے سی پیک جیسے اہم منصوبے کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی جس کی اجلاس میں مذمت بھی کی گئی ہے۔
سپریم کورٹ کی جانب سے آرمی چیف کی مدت ملازت میں توسیع کے نوٹیفیکیشن کی معطلی کے بارے میں پوچھے گئے ایک سوال پر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھا کہ یہ معاملہ چونکہ عدالت میں ہے اورعدالتوں کے اندر اپنے مسائل ہوتے ہیں، اس لیے اس پر تبصرہ نہیں کرنا چاہیے۔
مولانا فضل الرحمان نے مزید کہا کہ اپوزیشن جماعتوں نے الیکشن کمیشن میں تقرری کے لیے کمیٹی تشکیل دے دی ہے۔
جب بلاول بھٹو سے آصف زرداری کی صحت کے حوالے سے پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ سابق صدر کی طبیعت ناساز ہے اور ہمیں نجی ڈاکٹرز کی ان تک رسائی کی درخواست کے جواب کا انتظار ہے۔ امید ہے ان کا کیس سندھ منتقل کر دیا جائے گا۔
بلاول بھٹو زردای نے اس موقع پر کہا کہ پیپلز پارٹی بالکل انتخابات کے لیے تیار ہے۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ شفاف انتخابات کروائے جائیں، سلیکٹڈ کو پہلے تسلیم کیا تھا اور نہ آئندہ کسی سلیکٹڈ کو تسلیم کریں گے۔اسی سوال کے جواب میں مسلم لیگ ن کے احسن اقبال نے بھی نئے انتخابات کے انعقاد کی تائید کی۔
جب ایک صحافی نے یہ سوال کیا کہ مولانا فضل الرحمان نے بیک ڈور رابطوں کے بارے میں بلاول بھٹو کو اعتماد میں لیا تھا؟ تو اس پر مولانا فضل الرحمان نے قدرے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بات رابطوں کی نہیں موقف کی ہے، ہم اس پر مضبوطی سے قائم ہیں، آپ اس کی تعریف کریں کیوں خوامخواہ غلط فہمی پیدا کر رہے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  ملک بھر میں کورونا کی صورتحال

اپنا تبصرہ بھیجیں