women-cleaning

گھر کی صفائی اور خواتین کی صحت

EjazNews

کیرو لین کرسٹ نے رائٹرز میں ایک تفصیلی مضمون لکھاتھاکہ مسلسل گھر کی صفائی کرنے سے خواتین کے پھیپھڑے مسلسل خرابی کا شکار ہو رہے ہیں۔ ناروے کی یونیورسٹی آف ورجن کے ڈاکٹر آئن سٹائن سیوے نیس (Oistein svanes)نے 6200مردوں اور عورتوں کا تجزیہ کیا۔ اس نے یورپی کمیونٹی ریفٹریٹی ہیلتھ سروے کی مدد حاصل کی۔ ان کا سروے 9ممالک میں ہوا۔ تاہم 20سالہ سروے میں مردوں خواتین نے تین تین مرتبہ سروے کرائے۔ ان کی عمریں 35سال کے لگ بھگ تھیں۔ جن میں سے 8.9خواتین اور 1.9مرد اپنے گھر وں پر خود صفائی کرتے تھے۔ امریکی پھیپھڑا ایسوسی ایشن نے اس کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ دوران صفائی فضائی آلودگی خواتین کے پھیپھڑے 35سال کے بعد انحطاط پذیر ہونے لگے۔ اپنے گھروں میں صفائی نہ کرنے والی خواتین کے پھیپھڑے صحت مند و توانا رہے ،جب ان کا موازنہ صفائی کرنے والی خواتین کے ساتھ کیا گیا تو فرق واضح نظر آیا۔ صفائی کے لیے کیمیکل استعمال کرنے والے یعنی خواتین کے پھیپھڑے ان کے مقابلے میں ذرا زیادہ تیزی سے خراب ہوئے۔
سائنسی ماہرین کے مطابق پھیپھڑوں کی نظام کی خرابی کا تعلق بظاہر صفائی میں استعمال ہونے والی مصنوعات سے بظاہر دکھائی نہیں دیتا۔ رپورٹ کے محققین نے اعتراف کیا کہ صفائی کرنے والی خواتین کے مقابلے میں دوسری خواتین کی نسبت زیادہ خراب ہوئے ۔ ایم سی سیما جیسی بیماریاں بھی ان میں زیادہ پائی جاتی ہیں۔ مصنفین نے اعتراف کیا کہ دن بھر آلودگی دن بھر سانس کے راستے میں جتنی آلودگی ہوتی ہے اتنی تو ایک سگریٹ روزانہ پینے والا اپنے جسم میں داخل کر لیتا ہے۔ ڈاکٹر سوینس کے مطابق مختلف طرح کے کیمیکل بھی خواتین کی صحت پر اثر انداز ہوتے ہیں جیسا کہ کپڑوں میں کپڑوں کے ریشے یا آبی لیکیوام ۔ یہ بھی کہا جاتا ہے کہ صفائی کا کیمیکل بظاہر ہر طرح سے چیک کر کے منظور کیا گیا ہے۔ تاہم ہمیں یہ دیکھنا چاہیے کہ صفائی میں کس طرح کا کیمیکل استعمال کیا جارہا ہے۔ نیسا پیسٹا یونیورسٹی کے ڈاکٹر مارگریٹ چین (Quinn) بھی پھیپھڑوں کے اس میدان میں کود پڑی۔ چن دراصل خود بھی گھر کی صفائی کے دوران مختلف طرح کے کیمیکل استعمال کرنے سے پھیپھڑوں کے مرض میں مبتلا ہوئی ہے۔ انہوں نے فضائی آلودگی کا بہر طور جائزہ لینے کا مطالبہ کیا ۔ان کے نزدیک گھریلو صفائی میں استعمال ہونے والی اشیاءمعیاری نہیں، کئی اقسام کے سپرے میں پایا جانے والا کیمیائی مادہ نظام تنفس میں خرابیاں پیدا کرتی ہیں۔
دنیا میں خواتین کو 9اہم مسائل کا سامنا ہے۔ سب سے پہلے ہمیں یہ اعتراف کرنا ہوگا کہ ہمارے معاشرے میں بلکہ دنیا بھر میں خواتین کو ایک جیسی صورتحال کا سامنا ہے۔ جو مسائل ہمارے ہاں ایک عورت کو درپیش ہیں وہی مسائل بلکہ اس سے کہیں زیادہ سنگین نوعیت کے مسائل دوسری جگہ عورتوں کو ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  خوف اور مایوسی خواتین کو ذہنی معذور بناسکتی ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں