children-reading

معلومات جو بہت کچھ سکھاتی ہیں

EjazNews

چن کوئی، چین کا ایک غدار شخص تھا۔ چینیوں نے اس سے نفرت کا ایک عجیب طریقہ اختیار کیا۔ انہوں نےاُگلدان (تھوکنے کے برتن) کا نام چن کوئی رکھ دیا اورآج تک چینی زبان میں تھوکنے کے برتن کو ’’چن کوئی‘‘کہا جاتا ہے۔
وقت ہمارے پاس اس طرح آتا ہے جس طرح کوئی دوست بھیس بدل کر اور تحفے لے کر آتا ہے۔ اور اگر ہم اس سے فائدہ نہیں اٹھاتے تو وہ تحفے سمیت چپ چاپ چلا جاتا ہے۔
وقت کو پیچھے سے مت پکڑو۔ یہ خام مال کی طرح ہے اس سے آپ جو چاہیں بنا لیں۔
وقت روئی کے گالوں کی طرح ہے۔ عقل و حکمت کے چرخے میں کات کر قیمتی پارچات بنالو ورنہ جہالت کی تیز آندھیاں اڑا کر دور پھینک دیں گی۔
وقت دولت کی مانند ہے جس کو ضائع کرنا جائز نہیں۔ یاد رکھو تم دولت تو کما سکتے ہو لیکن وقت میں اضافہ نہیں کر سکتے۔
اگر پھولوں کی تمنا ہو تو کانٹوں کا درد بھی برداشت کرنا پڑتا ہے۔
قناعت ایک لازال دولت ہے۔
حسد کسی انسان سے بھی نہیں کرنا چاہیے کیونکہ یہ نہ اچھی ہونے والی بیماری ہے۔
سب سے بہترین صدقہ اپنے گھروالوں پر خرچ کرنا ہے۔
غلامی عقل اور علم دونوں کو فنا کر کے رکھ دیتی ہے۔
سونے سے پہلے اپنے گناہوںکی معافی مانگ لو، ہوسکتا ہے کہ یہ زندگی کی آ خری رات ہو۔

یہ بھی پڑھیں:  شیر کو زندہ کرنے والے
کیٹاگری میں : بچے

اپنا تبصرہ بھیجیں