Muhammad-waseem

میں استقبال کیلئے نہیں پاکستان کیلئے فائٹ کرتا ہوں:محمد وسیم

EjazNews

محمد وسیم کا کا کہنا ہے کہ میں فائٹ اس لیے نہیں کرتا کہ کوئی میرا استقبال کرے بلکہ میں پاکستان کیلئے میچ کھیلتا ہوں ،میرا استقبال پوری دنیا میں کیا جاتا ہے۔میں اپنے ہر ٹور، ہر میچ اور فائٹ پاکستان کیلئے کرتا ہوں اور ہمارے ملک میں بہت ٹیلنٹ موجود ہے۔
اس میں کوئی شک نہیں کہ پاکستان میںبہت ٹیلنٹ موجود ہے۔ بس ان کو مواقعوں کے ساتھ ساتھ بھرپور ٹریننگ مل جائے تو پاکستان دنیا کی بہت سی کھیلوں کا عالمی چیمپیئن بن سکتا ہے۔
محمد وسیم کا کہنا تھا کہ میں اس فائٹ کو جیت کر کافی خوش ہوں۔ اور میں اپنی جیت اپنی قوم کے نام کرتا ہوں۔
دبئی میں کھیلے گئے سپر فلائی ویٹ کیٹیگری کے مقابلے 8 راونڈز پر مشتمل تھے۔جہاں محمد وسیم 75 کے مقابلے میں 77 پوائنٹس سے فاتح قرارپائے۔

شعیب اختر نے محمد وسیم کے بارے میں لکھا ہے کہ ان کی جیت ہمارا فخر ہے اور ہم سب ان کے ساتھ کھڑے ہیں۔
محمد وسیم نے اپنے ٹرینر ز ، دوستوں اور چاہنے والوں کا شکریہ بھی ادا کیا۔
محمد حفیظ ان کے بارے میںکہتے ہیں کہ وسیم آپ کی اس جیت پر پوری قوم کو آپ پر فخر ہے۔
محمد وسیم نے 13 ستمبر 2019 کو دبئی کے میرینہ باکسنگ ہال میں فلائی ویٹ باٹ باکسنگ چیمپیئن شپ میں فلپائنی باکسر کونراڈوسور کو محض 82 سیکنڈ میں ناک آو¿ٹ کرکے اعزاز اپنے نام کیا تھا۔پاکستانی باکسر نے چیمپیئن شپ جیتنے کے بعد کامیابی کو مقبوضہ کشمیر کے عوام کے نام کیا تھا جہاں بھارتی حکومت نے کرفیو نافذ کیا ہوا ہے اور پوری دنیا مقبوضہ کشمیر کے اندرونی حالات سے بے خبر ہے۔
اپنی گزشتہ جیت کے موقع پر کیے گئے ٹویٹ میں جہاں بہت سے شکوے تھے وہی پر ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے ہر فائٹ اور ہر ٹوور سے بہت کچھ سیکھا ہے اور ہر ٹوور دنیا کو یہ دکھانے کا موقع دیتا ہے کہ پاکستان میں باکسنگ کا ٹیلنٹ موجود ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  میں کس طرح عید مبارک لکھوں جبکہ میری شہ رگ پر بندوق تنی ہے
دبئی حکام کے ساتھ

سوشل میڈیا پر ان کا ٹویٹ وائرل ہونے کے بعد آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے ان سے لاقات کی تھی جہاں آرمی چیف نے ان کو کامیابی اور ملک کا نام روشن کرنے پر مبارک باد دی تھی۔
اس دفعہ محمد وسیم نے ایک اور چیمپیئن شپ اپنے نام کی ہے ۔ جس کے بعد انہوں نے ایک ٹویٹ بھی کیا ہے۔

فائٹ کا ایک منظر

اپنا تبصرہ بھیجیں