sick women

عورتوں میں ہائی بلڈ پریشر کے نقصانات

EjazNews

ہائی بلڈ پریشر کئی مسائل پیدا کر سکتا ہے مثلاً دل کی بیماریاں ،گردے کے امراض اور دل کا دورہ۔
خطرناک بلڈ پریشر کی نشانیاں:
بار بار سر میں درد۔
سرچکرانا۔
کانوں میں گھنٹیاں بجنا۔
اگر آپ کسی بھی وجہ سے ڈاکٹر کے پاس جائیں تو کوشش کریں کہ اپنا بلڈ پریشر بھی اسی وقت معلوم کرلیں۔
ہائی بلڈ پریشر کی وجہ سے شروع میں کوئی علامات ظاہر نہیں ہوتیں۔ خطرناک علامتیں ظاہر ہونے سے پہلے ہی، بلڈ پریشر کو کم کر لینا چاہیے۔ جن لوگوں کا وزن ضرورت اور مقررہ معیار سے زیادہ ہے یا جن کے خیال میں انہیں ہائی بلڈ پریشر رہنے کا اندیشہ ہے، انہیں چاہیے کہ اپنا بلڈ پریشر باقاعدگی سے چیک کرواتے رہیں۔
علاج اور بچائو:
روزانہ تھوڑی بہت ورزش کریں۔
اگر آپ کا وزن ضرورت سے زیادہ ہے تو اپنا وزن کم کریں۔
ایسی غذائوں سے پرہیز کریں جن میں چکنائی، نشاستہ (شکر)یا نمک کی مقدار زیادہ ہو۔
اگر آپ تمباکو نوشی کرتی ہیں یا تمباکو چباتی ہیں تو اس کو چھوڑنے کی کوشش کریں۔
اگر آپ کا بلڈ پریشر بہت زیادہ رہتا ہے ممکن ہے آپ کو دوائیں لینے کی بھی ضرورت پڑے۔
پیشاب، پاخانہ میں دشواری:
زیادہ عمر کی بہت سی عورتوں کو بلا ارادہ پیشاب نکل جانے یا پاخانہ کرنے میں دشواری کی شکایت ہو جاتی ہے۔ یہ بھی ممکن ہے کہ وہ ایسے مسائل کے بارے میں کسی کو خصوصاً کسی مر د ڈاکٹر کو بتاتے ہوئے پریشانی محسوس کرتی ہوں ، چنانچہ وہ اکیلے ہی ا س مصیبت کو برداشت کرتی رہتی ہیں۔
پیشاب کے مسائل اکثر، فرج کے اندرونی عضلات (پٹھوں) کی کمزوری کی وجہ سے پیدا ہو جاتے ہیں۔اگر پاخانہ کرتے ہوئے دشواری پیش آنے پر زور لگاتے وقت ایک عورت، دو انگلیاں اپنی فرج میں داخل کر کے اپنی پشت کی طرف دھکیلے تو اس طرح پاخانہ کرنے میں مدد ملتی ہے۔
زیادہ عمر کی عورتوں کو پاخانہ کرنے میں اس لیے بھی مشکل پیش آسکتی ہے کہ عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ اس کی آنتوں کے کام کرنے کی رفتار سست ہو جاتی ہے۔ اس سلسلے میں بہت زیادہ مشروبات، پینے ، ریشہ والی غذائیں (مثلاً بغیر چھنے آٹے کی روٹی یا سبزیاں) کھانے اور باقاعدگی سے ورزش کرتے رہنے سے مدد ملتی ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  دباﺅ سے پاک زندگی گزارنے کا راز

اپنا تبصرہ بھیجیں