hazrat hafsa

حضرت حفصہ رضی اللہ تعالیٰ عنہا کا ذکر خیر

EjazNews

حضرت حفصہ ؓ حضرت عمر ؓ کی صاحبزادی تھیں ان کے بیوہ ہو جانے کے بعد حضرت عمرؓ کو ان کے نکاح کی فکر ہوئی۔ حضرت عثمانؓ سے نکاح کی درخواست کی انہوں نے فرمایا میںاس معاملہ میں غور کر لوں۔ اس کے بعد حضرت عمرؓ نے حضرت ابوبکرؓ سے ذکر کیا اور حضرت ابوبکر ؓ نے خاموشی اختیار کی۔ حضر ت عمرؓ کو ان کی بے توجہی سے افسوس ہوا۔ آخر حضرت حفصہؓ کا نکاح رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے ہوگیا ۔ حضرت ابوبکر ؓ حضرت عمرؓ سے ملے اور کہاجب آپ نے حفصہ ؓ کی بابت مجھ سے ذکر کیا تھا تو اس وقت میں خاموش رہا آپ کو ناگوار گزرا ہوگا۔ میںنے اسی بنا پر جواب نہیں دیا تھا کہ اس کے متعلق رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے ذکر کیا تھا اور میں حضور کا راز فاش نہیں کرنا چاہتا تھا۔ اگر آپ نہ کرتے تو میں اس کے لیے آمادہ تھا۔ (بخاری)
حضرت حفصہ ؓ دونوں جہاں میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی بیوی ہیں۔ حضرت جبرائیل علیہ السلام نے ان کی بڑی تعریف فرمائی ہے۔ حفصہ ؓ بہت عبادت کرنے والی بہت روزہ رکھنے والی ہیں اور جنت میں آپ کی بیوی ہیں۔
حضرت حفصہ ؓ نے اللہ کے راستہ میں زمین وقف کر دی تھی اور اپنے بھائی عبد اللہ بن عمرؓ کو وصیت کی تھی کہ میرا اتنا مال خیرات کر دیجئے گا۔

یہ بھی پڑھیں:  حضرت خدیجہ رضی اللہ عنہا کا ذکر خیر

اپنا تبصرہ بھیجیں