bani isriyl

بنی اسرائیل کے مولوی صاحب کو سمجھانیوالی عورت کا ذکر خیر

EjazNews

موطا امام مالک میں یہ حکایت لکھی ہوئی ہے کہ حضرت قاسم بن محمد فرماتے ہیں کہ میری بیوی کا انتقال ہوگیا تھا تو محمد بن کعب قرظیؓ تسلی دینے کے لیے میرے پاس تشریف لائے۔ انہوں نے یہ حکایت سنائی کہ بنی اسرائیل میں ایک مولوی صاحب بڑے نیک دیندار اور سمجھ دار تھے ان کو اپنی بیوی سے بڑی محبت تھی اوربہت مرغوب و پسندیدہ تھی۔ خدا کے حکم سے وہ مر گئی جس کے سبب مولوی صاحب کو بڑا صدمہ اور رنج ہوا۔ یہاں تک کہ مولوی صاحب نے زیادہ صدمے کی وجہ سے دوست احباب اور ملاقاتی لوگوں سے ملنا جلنا چھوڑ دیا اور دروازہ بند کر کے گھر میں بیٹھ گئے ان کے پاس کوئی نہیں آجاسکتا تھا۔ بنی اسرائیل کی ایک نیک عورت نے جب یہ واقعہ سنا تو وہ مولوی صاحب کے گھر آئی اورکہا مجھے مولوی صاحب سے ایک فتویٰ تنہائی میں دریافت کرنا ہے اورآمنے سامنے بالمشافہ زبانی پوچھنا ہے اور جم کر دروازے پر بیٹھ گئی اور کہا بغیر پوچھے یہاں سے نہیں جاﺅں گی ۔ آخر کار مولوی صاحب کو خبر ہو گئی تو اس کو گھر میں آنے کی اجازت دے دی وہ حاضر ہو کر عرض کرنے لگی۔ ”انی استعرت جارة لی حلیتا“ میں نے اپنی پڑوسن سے زیور(عاریةً) مانگ کر لے لیا تھا ۔اس کو میں برابر ایک مدت تک استعمال کرتی اور پہنتی رہی اب اس نے آدمی بھیج کر مطالبہ کیا ہے کہ تم میرے زیورات واپس کر دو تو میںان کو واپس دے دوں یا نہیں؟ مولوی صاحب نے فرمایا نعم ہاں واپس کر دو ۔ اس عورت نے کہا ”انہ قد مکث عندی زمانا“ ۔ وہ میرے پاس بہت عرصے رہا ہے، اب میں کیسے واپس کر دوں۔ مولوی صاحب نے فرمایا ”ذالک احق لردک ایاہ “ پھر تو واپس کر دینا زیادہ حق ہے۔ جبکہ دینے والے نے ایک عرصہ تک نہیں مانگا یہ اس کا بڑا احسان ہے تو اس عور ت نے کہا ”اے یرحمک اللہ افتاسف علی ما اعارک اللہ ثم اخذہ منک وھو احق بہ منک“ مولوی صاحب آپ پر خدا رحم کرے پھرآپ کیوں رنج و غم میں پڑے ہیں جبکہ اللہ نے دی ہوئی چیز واپس لے لی ہے یہ سن کر مولوی صاحب کی آنکھیں کھل گئیں اور رنج وغم جاتا رہا اور اس عورت کی نصیحت سے اللہ تعالیٰ نے ان کو نفع پہنچایا ۔ (موطا امام مالک کتاب الجنائز )۔
تم نے دیکھا کہ کیسی ہوشیار، سمجھدار، عقلمند عورت تھی کہ مولوی صاحب کو کس طرح سمجھایا جس سے ان کی سمجھ میں آگیا ۔ تم بھی مصیبت میں صبر کرو اور دوسروں کو اسی طرح سمجھاﺅ۔

یہ بھی پڑھیں:  حضرت زینب رضی اللہ تعالیٰ عنہا

اپنا تبصرہ بھیجیں