super wood-1

سائنسدان سٹیل سے زیادہ مضبوط لکڑی تیار کرنے میں کامیاب

EjazNews

سائنسدان سٹیل سے زیادہ مضبوط لکڑی تیا رکرنے میں کامیاب
ٹین لی Tengliنامی سائنسدان نے سائنسی جریدہ سائنس ڈیلی کو بتایا کہ ”یہ ٹوٹنے میں دس گنا زیادہ توانائی لے گی یعنی اگر اسے جلانا اور توڑنا ہوتو اسے انسان کو کہیں زیادہ زور لگانا ہوگا حتی کہ لکڑی کو مختلف رخوں پر موڑا بھی جاسکتا ہے یعنی اسے بناتے وقت اسے کوئی بھی شکل دی جاسکتی ہے“۔
مصنوعی لکڑی کی تیاری کے لیے محققین نے سب سے پہلے عام لکڑی کو سوڈیم ہائیڈرو آکسائیڈ اور سوڈیم سلفائیڈ کے مکسچر میں کچھ دیر ابالاجس میں لکڑی میں شامل لگنگ Lignigاور ہیمی فیلولوس Himcllulsoseکا بڑا حصہ لکڑی سے الگ ہو گیا۔جس کے بعد لکڑی کو ایک خاص پراسیس کے ذ ریعے سے اس میں موجود خلا کو ختم کیا گیا اس عمل کے دوران اس کو ایک خاص حرارت پر گرم کیا گیا۔ درمیانی خلا کم ہونے سے لکڑی کی طاقت میں لا محالہ اضافہ ہوا۔ اس قسم کی لکڑی اب کاروں ، جہازوں او مضبوط ترین عمارتوں میں اینٹوں کی جگہ استعمال ہو سکتی ہے۔ سٹیل کی جگہ لکڑی کی چھتیں اور لکڑی کے جہاز بھی بنائے جاسکتے ہیں بقول ٹینگ لی اسے ہر اس جگہ استعمال کیا جاسکتا ہے جہاں ان دنوں سٹیل استعمال کیا جارہا ہے۔ ٹینگ لی کے ساتھی لیانگ Leingbing huhuنے ایک سائنسی جریدے کو بتایا کہ سپر وڈ کی مضبوطی نے اسے دیر پا بنا دیا۔ مگر اس کے باوجود یہ پائن یا کسی دوسری نرم ترین لکڑی کی طرح انتہائی سافٹ ہے۔ یہ ماحول دوست ہے اور اس سے گھر میں کچرا پیدا ہوتا ہے اور نہ دیمک کے لگنے کا امکان ہے جس کا فرنیچر برسوں کی بجائے عرشوں تک چلے گا۔ بقول ہو ہو یہ لکڑی سیلو لوس سے بھرپور پودوں سے بھی حاصل کی جاسکتی ہے اور یہ دنیا میں وافر مقدار میں پائی جاتی ہے اور دنیا میں چیر اور دوسری لکڑی کی کمی کو آسانی سے پورا کیا جاسکتا ہے
ہاورڈ یونیورسٹی Zhi gang suo زیڈ آئی گینگ سو کے پروفیسر برائے میکینک و میٹریل کا بھی یہی خیال ہے۔ اگرچہ انہوں نے خود اپنے طور پر تحقیق نہیں کی مگر میری لینڈ یونیورسٹی کی تحقیق سے فائدہ اٹھانے کا مشورہ زور دیا ہے بلکہ یونیورسٹی آف میری لینڈ کے محققین نے ٹرانسپیرنٹ لکڑی بھی بنائی ہے یہ لکڑی پلاسٹک اور شیشے کی جگہ بھی استعمال کی جاسکتی ہے یہ لکڑی شیشے کی مصنوعات سے کہیں زیادہ مضبوط ہوگی۔

یہ بھی پڑھیں:  شگاگو کا پہلا قاتل

اپنا تبصرہ بھیجیں