rabi pirzada

رابی پیرزادہ کی سوشل میڈیا پر نازیبا فلمیں اور تصاویر، سائبرکرائم میں رپورٹ کریںگی

EjazNews

رابی پیرزادہ پاکستان میں کسی تعارف کی محتاج نہیں ہیں۔ گزشتہ روز ان کی سوشل میڈیا پر نازیبا تصاویر اور فلمیں وائرل ہوئیں اور ان کے نام کا ہیش ٹیگ بھی پاکستان میں نمایاں رہا۔
رابی پیر زادہ کشمیر کے موضوع کو لے کر بھی ٹویٹ کرتی رہتی تھیں اور ایک تصویر جو ان کی بہت وائرل ہوئی انہوں نے خودکش جیکٹ پہن رکھی تھی۔ اس کے علاوہ 19اکتوبر کو انہوں نے اپنے سوشل اکاﺅنٹ پر ایک ٹویٹ بھی کیا تھا کہ کاش ہم اس درد کو محسوس کر سکیں جس سے مقبوضہ کشمیر گزر رہا ہے، مگر افسوس جیسے جیسے وقت گزر رہا ہے کشمیریوں کی تکلیفیں بڑھ رہی ہیں اور ہماری کاوشیں کم ہو رہی ہیں۔ مگر کشمیر کی بیٹی نہ بھولی ہے نہ بھولنے دےگی۔اس کے بعد انہوںنے کوئی ٹویٹ اپنے سوشل اکاﺅنٹ پر نہیں کیا۔

رابی پیرزادہ

اپنے گھروں میں انہوں نے مگرمچھ اور پالتو سانپوں کی ویڈیوز بھی شیئر کی جو کہ ان کو عدالت میں لیجانے کا باعث بھی بنیں۔
لیکن گزشتہ روز ان کی جو ویڈیوز انٹرنیٹ پر شیئر کی گئی ہیں یہ حد سے زیادہ گری ہوئی حرکت تھی۔ یوٹیوب سے ان ویڈیوز کو ہٹایا جارہا ہے۔ لیکن یہ سوشل میڈیا کا دور ہے۔ تمام لوگوں کے پرسنل اکاﺅنٹس چیک کرنا ممکن نہیں ہیں اور جن لوگوں نے وہ ویڈیوز ڈاﺅن لوڈ کر لی ہیں اور واٹس ایپ کے ذریعے یا فیس بک کے ذریعے پھیل رہی ہے اس کو روکنا شاید بہت مشکل ہے۔لیکن یہ سب کچھ ہوا کیسا ۔ انہوں نے پاکستان میں صرف اردو نیوز سے بات کی ہے جس میں ان کا کہناتھا کہ میں نے فون سیل کیا تھا شاید اس سے ڈیٹا چرایا گیا ہو۔ ان کا کہنا تھا کہ وہ سائبر کرائم سے رابطہ کرنے والے ہیں۔یہ نہایت سنگین مسئلہ ہے۔ اگریہ فون کے ڈیٹا سے نکالا گیا ہے۔لیکن سوشل میڈیا کے ذریعے ایک بات اور بھی گونج رہی ہے کہ یہ ان کے بوائے فرینڈ نے اپ لوڈ کی ہیں ان سے بدلہ لینے کیلئے ۔ لیکن جو بھی ہے یہ کسی طرح سے بھی اچھائی نہیں ہے۔
رابی پیر زادہ منظر سے غائب ہیں۔ اب یہ تو آنے والا وقت ہی بتائے گا کہ وہ سائبر کرائم کے پاس جاتی ہیں یا نہیں لیکن ایک بات طے ہے کہ سائبر کرائم کو خود بھی ایکشن لینا چاہئے بغیر کسی قسم کی درخواست کے انتظار کے۔ کیونکہ گزشتہ کچھ عرصہ پہلے لاہور کے سینما گھروں کی ایسے ویڈیوز لیک ہوئیں جن میں بچیاں اور بچے نازیبا حرکات کر رہے تھے۔ اب یہ کون لیک کرتا ہے کیسے کرتا ہے اس کو پکڑا جاسکتا ہے صرف سائبر کرائم کو حرکت میں آنا ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:  اقراء عزیز اور یاسر حسین شادی کے بندھن میں بندھ گئے

اپنا تبصرہ بھیجیں