nawaz sharif hospital

ڈاکٹروں نے نواز شریف کی صحت کو تشویشناک قرار دے دیا

EjazNews

لاہور کے سروسز ہسپتال میں زیر علاج سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ نواز کے تا حیات قائد میاں محمد نواز شریف کی صحت کے حوالے سے ڈاکٹروں نے اگلے 48 گھنٹے تشویش ناک قرار دے دئیے ہیں۔نواز شریف کی صحت کے معاملہ پر ڈاکٹرز کی تشویش بڑھنے لگی ہے کیوں کہ پلیٹ لیٹس کے لیے لگائے جانے والے انجکشنز اور اسٹیرائیڈز نواز شریف کے لیے مزید طبی مسائل کھڑے کرنے لگے ہیں۔ انجکشنز اور اسٹیرائیڈز کے باعث نواز شریف کے گردوں پر اثر ہونے لگا جس کے بعد ٹیسٹ کرائے گئے جن کی رپورٹس تسلی بخش نہیں آئیں۔ہسپتال ذرائع نے بتایا کہ دل کی بیماری کے باعث دی جانے والی ادویات پلیٹ لیٹس پر اثر انداز ہو رہی ہیں۔
میڈیکل بورڈ کے مطابق گزشتہ روز نوازشریف کے پلیٹ لیٹس میں دوبارہ کمی ہوگئی اور ان کے پلیٹ لیٹس 45 ہزار سے کم ہوکر 25 ہزار ہوگئے۔
جیونیوز کا کہنا ہے کہ ڈاکٹروں نے نوازشریف کو ہسپتال سے ڈسچارج کرنے سے انکار کردیا ہے اور انہیں پلیٹ لیٹس معمول پر آنے تک ہسپتال میں ہی رہنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔25 ہزار پلیٹ لیٹس پر دل کی دوائیں نہیں دے سکتے، نوازشریف کو دل کا سنگین مسئلہ ہے لیکن پلیٹ لیٹس کا گرنا بھی تشویشناک ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پشاور زلمی نے دفاعی چیمپئن کو ہرا کر جیت اپنے نام کر لی

اپنا تبصرہ بھیجیں