nawaz sharif

سابق وزیراعظم میاں نواز شریف کی طبیعت خراب ہونے پر سروسز ہسپتال میں داخل

EjazNews

نیب لاہور کی ٹیم میاںمحمد نواز شریف کو لے کر سروسز ہسپتال پہنچی جہاں ان کا وی آئی پی روم میں علاج جاری ہے۔نواز شریف کی ہسپتال آمد کا پتہ لگنے پر مسلم لیگی کارکنوں کی بڑی تعداد وہاں موجود تھی۔
نیب کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا کہ نواز شریف کی طبیعت اب بہتر ہے، ادویات کی وجہ سے ان کے خون کے خلیات میں کمی آئی تھی، سروسز ہسپتال میں ان کا مکمل چیک اپ ہوگا تاہم فی الحال ڈینگی ٹیسٹ منفی آیا ہے۔
ڈان نیوز کے مطابق نواز شریف کے معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا تھا کہ نواز شریف سے طبی مشاورت کے لیے نیب لاہور آفس میں ملاقات ہوئی، ان کی صحت کا معاملہ فوری توجہ طلب ہے۔
انہوں نے نواز شریف کو علاج کے لیے فوری ہسپتال منتقل کرنےکی سفارش کرتے ہوئے بتایا تھا کہ نواز شریف کا پلیٹلیٹس کاو¿نٹ کافی کم آرہا ہے۔
بعد ازاں پاکستان مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف نے نواز شریف کو ہسپتال منتقل نہ کرنے پر شدید احتجاج کرتے ہوئے کہا تھا کہ سرکاری رپورٹس میں سنگین خطرات کی واضح نشاندہی کی گئی، نواز شریف کی جان سے کھیلا جارہا ہے۔نواز شریف کو ہسپتال منتقل نہ کرنا حکومت کی سیاسی انتقام پر مبنی پالیسی ہے، خدا نخواستہ انہیں کچھ ہوا تو عمران خان کو ذمہ دار ٹھہرائیں گے۔جیل مینوئل پر عمل نہ کر کے حکمران لاقانونیت کے مرتکب ہو رہے ہیں۔
دوسری جانب نواز شریف کے داماد کیپٹل صفدر کو بھی پنجاب پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  جلیلہ حیدر 7گھنٹے کی پوچھ گچھ کے بعد رہا

اپنا تبصرہ بھیجیں