sarfraz+srilankan

لاہور سج گیا کرکٹ کے شائقین کیلئے

EjazNews

قذافی سٹیڈیم لاہور میں کپتان سرفراز احمد نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹی ٹوئنٹی سیریز میں سری لنکا کو آسان حریف نہیں سمجھ رہے، سیریز میں ٹاس کا کردار اہم ہوگا۔ ٹی ٹونٹی سیریز آسان نہیں ہوگی، عمر اکمل اور احمد شہزاد کی واپسی ہوئی ہے دونوں کو پورا موقع دیں گے۔ خواہش ہے کہ عمراکمل اور احمد شہزاد اچھا پرفارم کریں۔جبکہ ان کا کہنا تھا کہ سری لنکن ٹیم کو پاکستان میں خوش آمدید کہتے ہیں وہ پاکستان خوشی سے آئے ہیں امید ہے کہ وہ خوشگوار یادوں کے ساتھ واپس جائیں گے۔
جبکہ سری لنکن کپتان داسن شانکا کاکہا تھا کہ ٹی ٹونٹی سیریز میں بھی اچھا مقابلہ کریں گے، پاکستان ایک مشکل ٹیم ضرور ہے لیکن ہمارے کھلاڑی پُرعزم ہیں۔مہمان ٹیم کے کپتان کا کہنا تھا کہ انہیں اُمید ہے کہ سینئر کھلاڑی ٹیسٹ کھیلنے کیلئے پاکستان آئیں گے، آنے سے قبل اُنہوں نے سینئر کھلاڑیوں کو آمادہ کرنے کی کوشش کی تھی۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کرکٹ بورڈ اور سکیورٹی اداروں کا شکریہ ادا کرتے ہیں، ہمیں یہاں بہت اچھی سکیورٹی ملی ہے۔اس دوران ٹی ٹونٹی سیریز کی ٹرافی کی ایک بار پھر رونمائی کی گئی جس میں کپتانوں کا عزم بتارہا تھا کہ وہ اُسے اپنے نام کرنے کے خواہش مند ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:  میاں حمزہ شہباز شریف کی لاہور ہائیکورٹ میں میڈیا سے گفتگو
کرکٹ ٹیم لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں پریکٹس کرتے ہوئے

دوسرا اور تیسرا ٹی ٹونٹی میچ بھی 7 اور 9 اکتوبر کو قذافی اسٹیڈیم لاہور میں کھیلا جائے گا۔پاکستان اور سری لنکا کے درمیان تین ٹی20 میچوں کی سیریز کا آغاز لاہور کے قذافی اسٹیڈیم میں ہو رہا ہے ۔ایک سال سے زائد عرصے کے بعد قومی ٹیم میں دوبارہ جگہ بنانے والے اوپننگ بلے باز احمد شہزاد نے کہا کہ ٹیم میں سلیکشن پر وہ بہت خوش ہیں کیونکہ کم بیک کرنا کبھی بھی آسان نہیں ہوتا اور اس کے لیے اعصابی مضبوطی درکار ہوتی ہے لیکن ٹیم سے دور رہ کر انہیں اپنی غلطیوں پر قابو پانے کا موقع ملا۔پاکستان کے لیے ٹی20 انٹرنیشنل کرکٹ میں پہلی سنچری سکور کرنے والے بلے باز نے کہا کہ بطور کرکٹر ہمیں میدان میں حوصلہ افزائی درکار ہوتی ہے جو پاکستان سے زیادہ کہیں نہیں مل سکتی، پاکستانی قوم کرکٹ سے بہت پیار کرتی ہے اور میں ہم وطنوں کے سامنے کرکٹ کھیلنے کے لیے بہت پرجوش ہوں۔
جبکہ عمر اکمل کا کہنا تھا کہ ان کے مرحوم سسر اور سابق عظیم کرکٹر عبدالقادر کی خواہش تھی کہ وہ جلد قومی ٹیم میں کم بیک کریں اور وہ سری لنکا کے خلاف عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کر کے اسے عبدالقادر اور اپنی والدہ کے نام کریں گے۔انہوں نے کہا کہ میں قومی ٹیم میں واپسی پر بہت پرجوش ہوں، تین سال کے دوران اپنی فٹنس اور اسکلز بہترین بنانے پر توجہ دی اور عمدہ کارکردگی دکھا کر ٹیم میں مستقل جگہ بنانے کی کوشش کروں گا۔

یہ بھی پڑھیں:  کشمیر میں دھماکے۔الزام تراشیوں کا نیا دور شروع

اپنا تبصرہ بھیجیں