UNO-Start sestion

ڈونلڈ ٹرمپ نے ایران کو سب سے بڑا دہشت گرد قرار دے دیا

EjazNews

یو این او کا اجلاس شروع ہو چکا ہے جس میں مختلف ممالک کے سربراہان مملکت اپنے اپنے خیالات کا اظہار کریں گے اور آنے والے منصوبوں اور اپنے خطے کے حالات سے دنیا کو آگاہ کریں گے۔اس اجلاس میں ہر ملک اپنے اپنے طور پر اپنے طے شدہ اصولوں کے مطابق پراپیگنڈہ کرتا ہے ۔ اس اجلاس کا ابتداء ڈونلڈ ٹرمپ نے اپنی تقریر سے کیا ہے ۔
اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے خطاب کرتے ہوئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ ایران نہ صرف دہشت گردو ں کا سب سے بڑا سپانسر ہے بلکہ شام اور یمن میں بھی دہشت گردی کا ذمہ دار ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ امریکہ نے ایران کو ایٹمی ہتھیاروں کے حصول سے روکنے کے لئے معاہدہ توڑا۔
ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ سعود ی عرب پر حملے کے بعد ہم نے ایران پر بڑی پابندیاں لگائیں ، رویے بہتر بنانے تک ایران پر ایسی ہی پابندیاں لگتی رہیں گی۔ ہم بین الاقوامی تجارت کو ریفارم کرنا چاہتے ہیں، امریکہ اس معاشی عدم توازن سے نمٹنے کا فیصلہ کر چکا ہے، ماضی میں عالمگیر یت کے نام پر چھوٹی قوموں کو نشانہ بنایا گیا۔
ڈونلڈ ٹرمپ کا کہنا تھا کہ امریکہ، کینیڈا اور میکسیکو کے درمیان ناپٹا کو نئے معاہدے سے تبدیل کیاجارہا ہے۔برطانیہ کے یورپی یونین سے نکلنے کے ساتھ ہم برطانیہ سے معاہدے کریں گے۔ ان کا کہنا تھا کہ دو دہائیاں پہلے چین کو ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن میں شامل کیا گیا تھا، امید تھی کہ چین اپنے تجارتی اصولوں، انسانی حقوق میں بہتری لائے گا، لیکن یہ اندازہ غلط ثابت ہوا۔

یہ بھی پڑھیں:  شمالی کوریا اور امریکہ میں مذاکرات بے نتیجہ ختم

اپنا تبصرہ بھیجیں