مگلیو ٹرین

مگلیو ٹرین،اگر پاکستان میں چلے تو لاہور سے کراچی کا فاصلہ صرف دو گھنٹے کا ہوگا

EjazNews

گزشتہ دنوں چین کے شہر شنگھائی میں چھ سو کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے چلنے والی مگلیو ٹرین کا کامیاب تجربہ کیا گیا تھا۔غیر ملکی رپورٹ کے مطابق چین ابتدائی مگلیو پروٹو ٹائپ گاڑیاں سال 2020 کے اختتام تک تیار کر گا، یہ کیا چیز ہے اس کا اندازہ آپ اس بات سے لگا سکتے ہیں کہ اگر یہ ٹرین پاکستان میں چلے تو کراچی سے لاہور کا فاصلہ دو گھنٹے سے بھی کم وقت میں طے ہو گا۔یہ بات بھی مدنظر رہے کہ یہ چین کے پاس صرف ٹیکنالوجی نہیں ہے بلکہ دو سال قبل جاپان نے بھی دنیا کی تیز ترین ریل گاڑی مگلیو ٹرین کا کامیاب تجربہ کیا تھا۔مقناطیسی طاقت کی حامل یہ ٹرین اپنے ٹریک پر تیرتے ہوئے آگے کی طرف سفر کرتی ہے اور ایسا محسوس ہوتا ہے جیسے یہ ٹرین ہوا میں معلق ہو۔ریل گاڑی پر سوار مسافروں کا کہنا تھا کہ اس ٹرین میں بیٹھ کر سفر ہوائی جہاز جیسا معلوم ہوتا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  دنیا کی خوبصورت اور حیرت انگیز تصاویر

مشرقی چین میں ایم فیبیس اے جی 600 نامی طیارے نے 31 منٹ میں آزمائشی پرواز مکمل کی۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق طیارے میں میری ٹائم سرچ اور ریسکیو آپریشن کے دوران 50 افراد سفر کرسکیں گے، جبکہ یہ اپنے ساتھ 12 میٹرک ٹن پانی لے جا سکے گا جو آگ بجھانے میں مددگار ثابت ہوگا۔یہ پہلا ایسا بڑا ایئرکرافٹ ہے جسے چین نے خودمختار طور پر تیار کیا۔ طیارہ ہنگامی حالات اور قدرتی آفات کے دوران لوگوں کو ریسکیو کرے گا۔طیارہ 53.5 ٹن وزن کے ساتھ ٹیک آف کی صلاحیت رکھتا ہے اور ایک بار میں 2800 میل تک سفر کرسکتا ہے۔