Wrinkles

چہرے کی جھریوں سے نجات ممکن ہے

EjazNews

خواتین کی خوبصورتی و دلکشی جسم کے تمام حصوں کی خوبصورتی کا مجموعہ ہے۔ اپنی خوبصورتی کے بارے میں ہر عورت بہت زیادہ احتیاط پسند اور جدید دور کے تقاضوں کے مطابق خود کو خوبصورتی کے تصور میں ڈھالنے کے لئے اپنے طورپر کئی قسم کے جتن کرتی ہے، خاص طور پر اپنے چہرے کی خوبصورتی کے لئے دیسی طریقوں سے لے کر جدید ترین کاسمیٹک رینج کا استعما ل کرنے میں خود کو حق بجانب تصور کرتی ہیں۔
خواتین کے لئے جھریاں اور چہرے کی جھائیاں اورا ن کا تصور ہی ایک بھیانک خواب ہوتا ہے او ر وہ حتیٰ الامکان کوشش کرتی ہیں کہ اپنے چہرے کو جھریوں اور جھائیوں سے محفوظ رکھ سکیں تاکہ ان کے چہرے کی خوبصورتی اور دلکشی نہ صرف برقراررہ سکے بلکہ دیکھنے والوں بھی اچھا تاثر ظاہر ہو۔ اس ضمن میں آج کل جدید ترین اسکن ٹریٹمنٹ کے باعث خواتین اپنی اس پریشانی سے نجات حاصل کر کے خاصی مطمئن اور مسرور نظر آتی ہیں اس کی وجہ یہ ہے کہ جدید ترین ٹریٹمنٹ کے بعد خواتین پہلے سے بھی زیادہ خوبصورت اور جاذب نظر آتی ہیں اور اس سے بڑھ کر کسی عورت کے لئے خوشی کی کیا بات ہو سکتی ہے کہ وہ خوبصورت نظر آئے۔

جلدی امراض اور احتیاطی تدابیر

جھریاں کیوں پڑتی ہیں؟:
جھریاں شخصیت کے وقار کے ساتھ بڑھتی ہوئی عمر کی نشاندہی کرتی ہیں۔ دنیا میں ہر دوسرا فرد ان سے کسی نہ کسی طور پر خوفزدہ رہتا ہے۔ ظاہر ہے کہ عمر کے اسکور بورڈ پر بڑھتے ہوئے نمبر کسی کو پسند نہیں آتے۔ کچھ افراد ان سے چھٹکارا پانے کے چکر میں اپنی جلد کو خود اپنے ہاتھوں سے نقصان پہنچانے کا سامان کرتے ہیں۔ اس سلسلے میں سب سے پہلے ہمیں اس حقیقت سے آگاہ ہونا چاہئے کہ جھریاں کیوں پڑتی ہیں۔
جیسے جیسے ہماری عمر بڑھتی جاتی ہے ہمارے جسم میں کیلشیم کی پیداوار کم ہوتی جاتی ہے۔ ہماری جلد کے نیچے موجود Fat Pads کی چربی کی چھوٹی تھیلیاں گھلتی جاتی ہیں۔ لہٰذا جلد ڈھیلی ہوتی جاتی ہے پھر بڑھتی عمر کے ساتھ ہمارے جسم میں دو پروٹین خاص طور پر اپنی پیداوار گھٹا دیتے ہیں۔ یہ پروٹین جو جلد کے اندر ہوتے ہیں۔ الاسٹین اور کولا جن ہیں۔ الاسٹین ربر بینڈ کی خاصیت رکھنے والا فائبر ہوتا ہے جو جلد کا کھنچائو برقرار رکھنے والا فائبر ہوتا ہے جو جلد کا کھنچائو برقرار رکھنے میں مدد گار ثابت ہوتا ہے۔ کولا جن جلد کے لئے فائونڈیشن کا کام کرتا ہے اور جلد کی سطح ہموار رکھنے میں مد ددیتا ہے ۔اکثر ہونٹوں اور آنکھوں کے گرد جھریاں جلد نمودار ہوتی ہیں اس کی وجہ یہ ہے کہ یہاں کی جلد چہرے کے دیگر حصوں کے مقابلے میں سخت نہیں ہوتی۔ 30یا35برس کی ابتدائی عمر میں پپوٹے آہستہ آہستہ کم کر دیتے ہیں۔ آنکھوں کے نیچے سے جلد ڈھیلی اور پیشانی پر لائنیں نمودار ہونا شروع ہو جاتی ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ 40اور 50برس کی عمر میں آنکھوں کے گرد خاصی تعداد میں جھریاں ظاہر ہونا شروع ہو جاتی ہیں ۔ اس کے بعد ہونٹوں کی گرد اور گردن پر جھریاں وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ بڑھتی جاتی ہیں۔

چہرے کو نوجوان بنائے رکھنے کیلئے چند مشورے

سادہ فکس:
موجودہ دور میں جھریوں سے بچائو کے بہت سے طریقے ایجاد ہو چکے ہیں جن میں سے بیشتر جھریاں ختم کرنے کے دعو ے کئے جاتے ہیں لیکن ان طریقوں کے اپنانے میں بہت سے خطرات بھی لاحق ہو تے ہیں۔ اس ضمن میں سادہ فکس موثر طریقہ مانا جاتا ہے۔ اس طریقے میں جھریوں سے بچائو کے لئے الفاہائیڈرو آکسی ایسڈ کریم استعمال کی جاتی ہے ۔ یہ کریم دودھ، پھلوں اور گنے سے حاصل کر دہ ایسڈ اور دیگر قدرتی اجزاء سے تیار کی جاتی ہے۔ یہ تمام اجزاء جلد کی حفاظت کے لئے انتہائی موثر سمجھے جاتے ہیں۔ یہ کریم خشکی ختم کر کے جلد کی بیرونی سطح میں موجود مردہ خلیوں کو تباہ کر دیتی ہے جس سے چہرہ تروتازہ ہو جاتا ہے۔ تحقیق سے ثابت ہوا کہ یہ کریم میوسین بھی پیدا کرتی ہے۔
یہ سادہ فکس کولا جن فائبر کی پیداوار بڑھانے میں مدد دیتا ہے۔ جس کے نتیجے میں جلد کی اندرونی تہہ موٹی ہو جاتی ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق جلد کی اکثر جھریاں اس کریم کے استعمال سے ختم ہو جاتی ہیںلیکن ایسی خواتین جنہیں شدید قسم کے دانوں یا ایگزیما کی شکایت ہو وہ اس سادہ فکس کو استعمال کرنے سے پہلے ماہر امراض جلد سے ضرور مشورہ کر یں۔ کولا جن استعمال کرنے سے بہت فرق پڑتا ہے اور کولا جن جھریوں کو دور کرنے میں بہت ممدو معاون ثابت ہوتا ہے اور یہ جلد کی نرمی میں اضافہ کرتا ہے۔

چمکتا دمکتا چہرہ آپ کا بھی ہو سکتا ہے

جھریوں سے بچائو کے طریقے:
جھریوں کے خاتمے کے لئے ضروری ہے کہ ان سے پہلے ہی سے بچائو کی مناسب تدابیر ا ختیار کرلیا جائے۔ اس کے لئے مندرجہ ذیل باتوں کا خیال رکھا جائے۔ سن اسکرین کریم کا باقاعدہ استعمال کیا جائے۔ ڈاکٹروں کے مطابق 90سے80فیصد افراد میں بڑھتی ہوئی عمر کا اہم سبب سورج کی تمازت ہے۔ سورج کی شعاعوں کے مضر اثرات جلد پر تمام عمر قائم رہتے ہیں۔ موئسچرائزر کا استعمال اگرچہ جھریوں کا خاتمہ نہیں کرتا لیکن جلد کی نمی کو ختم کرنے سے بچاتا ہے۔ آپ جلد کو ڈھیلا پڑنے اور عارضی طور پر جھریوں کو نمایا ں ہونے سے بچا سکتے ہیں۔ سگریٹ نوشی سے اجتناب بھی ضروری ہے۔ تحقیق کے مطابق بہت زیادہ سگریٹ نوشی کرنے والے افراد میں جھریاں سگریٹ نہ پینے والے کے مقابلے میں پانچ گنا زیادہ ہوتی ہیں۔ ماہرین کے مطابق سگریٹ نوشی سے جلد کو مہیا ہونے والے خون اور آکسیجن میں کمی واقع ہو جاتی ہے جس کا واضح اثر کولا جن اور الاسٹین پر پڑتا ہے۔ جھریوں سے نجات کے لئے ایک سادہ سا عمل یہ ہے کہ روزانہ سورج نکلنے سے پہلے ایک گلاس تازہ پانی کا پی لیا جائے، اس کے علاوہ پانچ وقت کی نماز اور ہر وقت باوضو رہنا بھی چہرے کی شادابی کے لئے اکسیر ہے۔
نسرین شاہین

اپنا تبصرہ بھیجیں