pakistan crickter

پاکستان اور انگلینڈ سیریز کون کس پوزیشن پر کھیل رہا ہے

EjazNews

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان پہلا ٹیسٹ میچ 5اگست کو مانچسٹر میں کھیلا جائے گا، قومی ٹیم دوسرااور تیسرا ٹیسٹ اور ٹی ٹونٹی سیریز سائوھ مپٹن میں کھیلے گی۔ جبکہ دونوں ٹیموں کے درمیان ٹی ٹونٹی سیریز 28اگست سے یکم ستمبر تک کھیلی جائے گی۔
پاکستان کرکٹ بورڈ 29رکنی سکواڈ کا بھی اعلان کر چکی ہے۔اور کھلاڑیوں کے بیان بھی سامنے آرہے ہیں۔اس دورے میں سرفراز بھی شامل ہیں۔فخر زمان کا بیان بھی سامنے آیا جس میں وہ کہہ رہے ہیں کہ لاک ڈائون کے دوران ذہنی مضبوطی پر کام کیا ، چیمپینز ٹرافی کی خوشگوار یادیں آج بھی انہیں تازہ دم کر دیتی ہیں۔جبکہ ٹیم مینجمنٹ میں یونس خان کی شمولیت کو انہوں نے سراہا۔

دورہ انگلینڈ کے لیے طویل اور محدود، دونوں طرز کی کرکٹ کے نمایاں کھلاڑیوں پر مشتمل ایک وسیع اسکواڈ کا انتخاب کیا گیا ہے۔ جس کی وجہ کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے تیار کردہ ایس او پیز کے مطابق تمام کھلاڑیوں کی ایک ساتھ انگلینڈ روانگی اور پھر واپسی ہے۔
پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق کپتان بیٹسمین یونس خان کو انگلینڈ کے خلاف سیریز کے لیے قومی ٹیم کا بیٹنگ کوچ مقرر کیا ہے۔کرکٹ بورڈ نے کہا تھا کہ ٹیم کا سپن بولنگ کوچ اور تین ٹیسٹ اور تین ٹی ٹونٹی میچز کے لیے مینٹور مقرر کیا گیا ہے۔انگلینڈ کے خلاف سیریز اگست اور ستمبر میں کھیلی جائے گی۔ کرکٹ بورڈ کے مطابق اس کی تفصیلات بعد میں جاری کی جائیں گی۔
پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیف ایگزیکٹو وسیم خان نے کہا تھا کہ خوشی ہے کہ یونس خان جیسے قد آور اور شاندار بیٹنگ ریکارڈ کے حامل کرکٹر نے اس اہم دورے کے لیے پاکستان کرکٹ کے ساتھ کام کرنے پر رضامندی ظاہر کی۔ کئی کھلاڑیوں کے لیے مینٹور کی حیثیت رکھتے ہیں اور وہ انگلش کنڈیشنز سے بخوبی واقف بھی ہیں جس کی وجہ سے ہمارے لیے اثاثہ ثابت ہوں گے۔کوچ کی حیثیت سے ہیڈ کوچ مصباح الحق اور باؤلنگ کوچ وقار یونس کے ہمراہ انگلینڈ روانہ ہوں گے۔
پاکستان کرکٹ بورڈ کے مطابق یہ فیصلہ ہیڈ کوچ مصباح الحق اور باؤلنگ کوچ وقار یونس کو ضروری اور اہم وسائل کی فراہمی کے لیے کیا گیا ہے جو انہیں ٹیم کی کارکردگی کو مزید بہتر بنانے میں مدد کرے گا۔
یونس کے بیٹنگ کوچ مقرر ہونے سے جہاں کرکٹ کے شائقین میں خوشیاں ہیں وہی پر دوسرے شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگ بھی انہیں مبارکبادیں د ے رہے ہیں۔

29 کھلاڑیوں کے نام:

اوپنرز :عابد علی(سندھ)، فخر زمان (خیبر پختون خواہ)، شان مسعود (سدرن پنجاب) اور امام الحق (بلوچستان)

مڈل آرڈر بیٹسمین:اظہر علی (کپتان قومی ٹیسٹ ٹیم )،بابر اعظم (نائب کپتان)، اسد شفیق، فواد عالم، حیدر علی ، افتخار احمد، خوشدل شاہ، محمد حفیظ اور شعیب ملک

فاسٹ باؤلرز :فہیم اشرف، حارث رؤف ،عمران خان، محمد عباس، محمد حسنین، نسیم شاہ، شاہین شاہ آفریدی ، سہیل خان، عثمان شنواری اور وہاب ریاض۔
وکٹ کیپر: محمد رضوان اور سرفراز احمد

اسپنرز:یاسر شاہ ، عماد وسیم ، کاشف بھٹی اور شاداب خان

اپنا تبصرہ بھیجیں