plan_crash

لاہور سے کراچی جانے والا طیارہ گر کر تباہ

EjazNews

لاہور سے کراچی جانے والا پی آئی اے کا طیارہ گر کر تباہ ہو گیا ہے۔ طیارے میں 91مسافر سوار تھے ۔ پی آئی اے کی پرواز کو حادثہ لینڈنگ سے قبل پیش آیا۔ سول ایویشن اتھارٹی کا عملہ، رسکیو ٹیمیں اور انوسٹیگیشن ٹیمیں جائے حادثہ پہ موجود ہیں۔جناح گارڈن میں گرنے والے طیارے کی پرواز پی کے 8303لاہور سے کراچی جارہی تھی۔سول ایوی ایشن اتھارٹی کے مطابق طیارے میں 91 مسافر اور فضائی عملے کے نو افراد موجود تھے۔
جہاز گرنے کے بعد ہر دفعہ دھواں اٹھ رہا تھا۔ جہاں پر گھروں کو نقصان پہنچا ہے وہی پر بہت سی قیمتی جانیں بھی ضائع ہوئی ہیں۔
آئی آیس پی آر کے مطابق پاکستان آرمی اور رینجر کی ریسکیو ٹیمیں جائے حادثہ پر پہنچ گئی ہیں۔پاکستان آرمی ایوی ایشن کے ہیلی کاپٹر ڈمیج ایسسمنٹ اور امدادی کاروائیوں کے لیے جائے حادثہ کی طرف روانہ کر دئیے گئے ہیں۔ اربن ریسکیو ٹیمیں بھی جائے وقوعہ کی طرف بھیجی جاری ہیں۔
وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے وزیراعلیٰ سندھ کے کمشنر اور ڈی آئی جی کو علاقے میں فوری پہنچنے کی ہدایت کردی ہیں۔
ترجمان پی آئی اے کے مطاق طیارے کا 2بج کر 37منٹ پر ائیر کنٹرولر سے رابطہ منقطع وا، حادثہ لینڈنگ سے چند لمحے پہلے ہوا۔ تحقیقات جاری ہیں کہ حادثہ کیوں پیش آیا۔
طیارہ گرنے پر صدر مملکت اور وزیراعظم سمیت ملک کی تمام اہم شخصیات نے افسوس کا اظہار کیا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  پشاور زلمی اور لاہور قلندرز نے ٹیموں کی مضبوطی کیلئے نئے کھلاڑی شامل کر لیے