حلق و تقصیر کی حکمت

حج پالیسی 2020ءکا اعلان ،رواں سال حج پیکج 4 لاکھ 90 ہزار روپے کا ہوگا

EjazNews

معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات فردوس عاشق اعوان کے ہمراہ پریس کانفرنس کے دوران وزیر مذہبی امور نور الحق قادری نے رواں حج پالیسی کااعلان کر دیا ۔
اس مرتبہ 1لاکھ 79ہزار 2010افراد حج کرنے جائیں گے۔ان کا کہناتھا کہ حج کوٹے میں اضافہ متوقع ہے۔رواں برس سرکاری حج سکیم کو 60 فیصد اور نجی حج سکیم کے لیے 40 فیصد کوٹہ مختص کیا گیا ہے۔
وزیر مذہبی امور کا میڈیا بریفنگ میں کہنا تھا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کو مد نظر رکھتے ہوئے نجی حج آپریٹرز میں یکساں کوٹہ تقسیم کیا جائے گا۔
ان کا کہنا تھا شمالی ریجن کے لیے رواں سال حج پیکج 4 لاکھ 90 ہزار روپے کا ہوگا جس میں اسلام آباد، پشاور، لاہور، سیالکوٹ، ملتان اور رحیم یار خان شامل ہیں۔جنوبی ریجن میں کوئٹہ، کراچی اور سکھر شامل ہیں جس کے لیے حج پیکج 4 لاکھ 80 روپے کا ہوگا۔ گلگت بلتستان میں عارضی حاجی کیمپ لگائیں گے تاکہ ان کی سفری سمیت دیگر پریشانی کم ہوسکیں، جبکہ روڈ ٹو مکہ منصوبے کے تحت 70 سے 80 ہزار عازمین فائدہ اٹھا سکیں گے۔قرعہ اندازی کے بغیر 70 سال یا اس سے زائد عمر کے افراد کے لیے 2 ہزار جبکہ اوورسیز پاکستانی جو اپنے اہلخانہ کے ہمراہ پہلی مرتبہ حج کا ارادہ رکھتے ہیں، ان کے لیے ایک ہزار ویزے مختص کیے جائیں گے۔ ہماری کوشش ہوگی کہ حج پیکج کی قیمت میں کمی لائی جا سکے۔ان کا کہنا تھا کہ گزشتہ برس پاکستانی حجاج کو مجموعی طور پر ساڑھے 5 ارب روپے واپس کیے گئے۔حج پیکج میں اضافے کی وجہ فضائی اخراجات میں اضافہ اور روپے کی قدر میں کمی ہے۔جبکہ سعودی عرب نے ویزا فیس میں بھی اضافہ کردیا اور ریاض میں ٹرانسپورٹ اور ٹرین کے کرایوں میں اضافہ ہوا ہے۔
نور الحق قادری کا میڈیا بریفنگ میں کہنا تھا کہ وزیراعظم کی ہدایت پر سعودی عرب میں چند روز قیام کے دوران صورتحال کا مشاہدہ کیا تاکہ پاکستانی حجاج کے لیے زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جاسکیں۔

یہ بھی پڑھیں:  وائرس کے آنے کے 10روز میں ہی سینی ٹائزر کی قلت کا سامنا تھا ، آج وافر موجود ہے: فواد چوہدری