کامیابی کا راز

successful-peoples

پیارے بچو!انسان کے اندر کچھ کر گزرنے کی لگن محنت اور بے انتہا صبر ہی دوسروں سے اُسے ممتاز کرتا ہے۔ دنیا میں بہت سی مثالیں ایسی ہیں کہ آج جو اونچے مقام پر کھڑا ہے کل وہ پستیوں کی دلدل میں تھا۔ لیکن اپنی محنت اور ہمت کی بنا پر آج وہ اپنا مقام حاصل کرچکا ہے۔
بچو!آج میں آپ کو ایک کہانی سناتا ہوں جو کہ ایک جوتا ساز کی ہے۔مشہور جوتا ساز کمپنی باٹا کا بانی تھامس باٹا ایک غریب اور پسماندہ سا آدمی تھا۔ وہ ایک کھوکھے میں جوتے سلائی کیا کرتاتھا۔ ایک بار اس کے جوتے فوجیوں کی نظروں سے گزرے تو انہوں نے اسے سراہا اور اسے کچھ جوتے بنانے کا آرڈر دے دیا۔ اس نے بڑی محنت سے فوجی بوٹ تیار کئے۔ وہ جوتے اتنے مضبوط اور دلکش تھے کہ اسے بھاری آرڈر ملنے لگے۔ اب اس نے فوجیوں کے علاوہ عام آدمی کے لئے بھی جوتے تیار کرنا شروع کر دئیے۔ وہ اب کھوکھے سے نکل کر بڑی دکان میں آگیا تھا۔ اس کے جوتوں کی کوالٹی اور مضبوطی کی تعریفیں ہونے لگیں۔ آہستہ آہستہ اس طرح شاخیں دوسرے شہروں میں پھیلنے لگیں ایک وقت آیا کہ باٹا کانام سنکر لوگ آنکھیں بند کرکے جوتے خریدتے لیتے تھے۔
اس طرح کی بہت سی مثالیں ہمارے آس پاس بکھری پڑی ہیں۔ دنیا میں جتنے بھی مشہور اور کامیاب ترین انسان ہیں۔ ان کا اصل محنت اور جدوجہد ہے۔ پہلے وہ غریب تھے لیکن غربت کو انہوں نے اپنی کمزوری نہیں بننے دیا۔ انہوں نے محنت کی ،جدوجہد کو اپنا وطیرہ بنایا اور سرخرو ٹھہرے۔ دیکھا جائے تو اسلامی تعلیمات بھی ہمیں یہی کچھ سکھاتی ہیں ۔بہانے بنانے سے ہمارے حالات نہیں سدھرنے والے اگر ترقی کرنی ہے تو کچھ کر گزرنے کا جذبہ لازمی ہو ناچاہیے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں