پشاور زلمی اور لاہور قلندرز نے ٹیموں کی مضبوطی کیلئے نئے کھلاڑی شامل کر لیے

psl_Shedeol
EjazNews

لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں منگل کو دوپہر دو بجے سے رات گئے تک سٹیڈیم سجا رہے گا۔ اب کم بخت کرونا وائرس ایسا وارد ہوا ہے کہ اللہ کی پناہ ۔ کھیل کا مزہ اب صرف ٹی وی کی سکرین یا ویب سائٹس پر ہی اٹھانا پڑے گا ۔لائیو جا کر اپنے کھلاڑیوں کا حوصلہ بڑھانے والی بات اس مرتبہ نہیں رہی۔ لاہور کے قذافی سٹیڈیم میں کھیلنے سے کوئٹہ گلیڈی ایٹرز محروم ہو چکے ہیں جو ٹیم میں سب سے پہلے باہر ہونے والوں میںشامل ہیں۔ دفاعی چیمپیئن یاتو اس دفعہ زیادہ پر اعتماد تھے یا پھر قسمت کو منظور ہی ایسا تھا۔ لاہور قلندرز جو اس ٹورنامنٹ کی سب سے کمزور ٹیم سمجھی جارہی تھی ۔ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کو دوبار ان سے ہارنا پڑا اور لاہور قلندرز کے اعتماد کو پر لگ گئے۔
بعض تجزیہ کار یہ بھی کہہ رہے ہیں کہ لاہور قلندرز جس طرح سے کھیل رہی ہے ہو سکتا ہے وہ فائنل تک اس دفعہ رسائی حاصل کر لے اور اس کے بہت زیادہ چائنسز ہیں۔ کیونکہ لاہور قلندرز بھی ہماری پا کستانی ٹیم کی طرح کھیل کا مظاہرہ کر رہی ہے کب کیا کر جائیں گے کسی کو پتہ نہیں ہے۔
زمبابوے سے تعلق رکھنے والے آل راؤنڈر سکندر رضا پشاور زلمی کی ٹیم میں شامل ہو چکے ہیں وہ سلورکیٹگری کے کھلاڑی ہیں ۔33سالہ کھلاڑی پشاور زلمی میں شامل ہوں گئے جو پہلے سیمی فائنل میں ملتان سلطانز کے مقابلے میں پشاور زلمی کا دفاع کریں گے۔
دوسری جانب لاہور قلندرز نے عابد علی اور سلمان علی آغا کو اپنی لائن اپ میں شامل کر لیاہے۔ دونوں کھلاڑی سلورکیٹگری میں کھیلیں گے۔
لاہور قلندرز دوسرے سیمی فائنل میں شام 7بجے کراچی کنگز کا مقابلہ کرے گا۔
ان کھلاڑیوں کی شمولیت پی سی بی نے منظور کر لی ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں