میرٹ پر پورا اترنے کے باوجود میرے والد سے پیسوں کا مطالبہ کیا گیا:ویرات کوہلی

virat_kohli
EjazNews

انڈین کرکٹ ٹیم کے کپتان ویرات کوہلی نے انسٹا گرام لائیو چیٹ شوالیون آن ٹین میں انکشاف کیا ہے کہ والد کی جانب سے رشوت نہ دینے پر انہیں کرکٹ ٹیم کے لیے مسترد کر دیا گیا تھا۔
انڈیا ٹوڈے کے مطابق ویرات کوہلی کا کہنا تھا میرے آبائی علاقے دہلی میں بعض اوقات نامناسب چیزیں بھی ہوتی ہیں۔ ایک مرتبہ ایک صاحب سیلیکشن کے معاملے میں اصولوں پر عمل نہیں کر رہے تھے۔ میرٹ پر پورا اترنے کے باوجود میرے والد سے پیسوں کا مطالبہ کیا گیا۔میرے والد نے ان کو کہا اگر آپ نے ویراٹ کو منتخب کرنا ہے تو یہ میرٹ پر ہوگا، میں اضافی کچھ نہیں دوں گا۔
اس وقت کو یاد کرتے ہوئے ورات کوہلی کا کہنا تھا کہ جب منتخب نہیں ہوا، میں بہت رویا تھا اور ٹوٹ گیا تھا۔ اس واقع نے مجھے بہت کچھ سکھایا۔ میں نے محسوس کیا کہ کامیاب بننے کے لیے مجھے غیر معمولی ہونا چاہیے اور اس کو میں اپنی محنت اور کوشش سے حاصل کروں گا۔
والد نے ان کو عمل کے ذریعے درست راستہ دکھایا۔ ویرات کوہلی کا مزید کہنا تھا کہ والد کو کھونے کے باوجود میں نے کیریئر پر توجہ دی۔ والد کے انتقال کے ایک دن بعد رانجی ٹرافی میچ میں بیٹنگ کی۔ان کی موت نے یہ احساس دلایا کہ میں نے زندگی میں کچھ کرنا ہے۔ میں سوچتا ہوں کتنا اچھا ہوتا اگر میں اپنے والد کو اچھی اور پرامن ریٹائرمنٹ کی زندگی دیتا جس کے وہ مستحق تھے۔کبھی کبھی ان کے بارے میں سوچتے ہوئے جذباتی ہو جاتا ہوں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں