دنیا جس آزمائش سے گزر رہی ہے اس میں الزام تراشی کی بجائے اتحاد کی ضرورت ہے

coronavirus_deaths
EjazNews

دنیا میں بسنے والے انسان کرونا وائرس کی وبا کی وجہ سے ایک سخت آزمائش سے گزر رہی ہے۔ دنیا جہاں میں اس وائرس سے متاثر ہو رہی ہے اور سب سے زیادہ اس وائرس سے متاثر ہونے والے وہ ممالک ہیں جن کو ترقی یافتہ ممالک کہا جاتا ہے۔ اور وہیں پر اس وائر س سے ہلاکتیں بھی زیادہ ہو رہی ہیں۔ یہ وائرس بلا امتیاز کسی کو بھی متاثر کر رہا ہے ۔ لیکن اس وقت بھی دیکھنے میں آرہا ہے کہ چین اور امریکہ کے درمیان لفظی جنگ جاری ہے۔ ایران پر پابندیاں بھی نرم نہیں کی جارہی ہیں۔ کشمیر میں اسی طرح کرفیو ہے جیسے اس وائر س سے پہلے تھا۔ فلسطین آج بھی اسرائیل کے ہاتھوں مر رہا ہے۔ دنیا اپنے جھگڑے کسی طرح بھی کم نہیں کر رہی ۔ یہ وائرس انسانوں کا بنایا ہوا ہے یا قدرت کا عذاب ہے یہ تو آنے والے وقتوں میں پتہ چلے گا کیونکہ چینی اس شخص کو ڈھونڈ رہے ہیں جو سب سے پہلے اس وائرس سے متاثر ہوا۔
دنیا کو اس آزمائش کے لمحے میں ایک دوسرے کی مدد کرنے کی ضرورت ہے ۔ معاملات کوبہتر کر نے کی ضرورت ہے۔ سب کا احترام اور سب کو جینو دو کی پالیسی پر عمل پیرا ہونے کی آج وقت کی ضرورت ہے اور اسی میں سب کی بھلائی ہے۔ اگر ہم دنیا میں پھیلے اس وائرس کے اعداد و شمار پر ایک نظر دوڑائیں تو دنگ رہ جائیں گے کہ ترقی یافتہ ممالک میں کیا ہو رہا ہے۔ مثال کے طور پر ہم دو تین ملکوں کی صورتحال آپ کے سامنے رکھتے ہیں۔
امریکہ میں کرونا وائرس کے کیسز کی تعداد 3لاکھ سے تجاوز کرگئی ہے جبکہ ہلاکتیں 8 ہزار 400 ہوچکی ہیں جن میں سے 3 ہزار 500 سے زائد ہلاکتیں صرف ایک امریکی ریاست نیو یارک میں ہوئی ہیں جو امریکہ میں وائرس کا مرکز بنا ہوا ہے۔
اٹلی میں انفیکشنز کی شرح کم ہوگئی ہے جہاں ہفتے کے روز 4ہزار 805کیسز رپورٹ ہوئے جس کے بعد وہاں مجموعی کیسز کی تعداد ایک لاکھ 24 ہزار 632ہوگئی ۔
آسٹریلیا حکام کا کہنا ہے کہ وہ ملک میں کرونا وائرس کے پھیلاؤ میں سست روی سے پراُمید ہیں تاہم انہوں نے خبردار کیا کہ سماجی دوری کی پابندی مہینوں تک جاری رہے گی۔
ایرانی وزارت صحت کے ترجمان کیانوش جہانپورکا کہناہے کہ مختلف شہروں میں مزید 2ہزار 560 افراد میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے۔کرونا وائرس کے شکار افراد کی مجموعی تعداد 55ہزار743 ہوگئی ہے۔
ایرانی وزارت صحت کے مطابق مزید158 افراد جان کی بازی ہارگئے ہیںجس کے بعد انتقال کرجانے والے افراد کی کل تعداد 3ہزار452ہوگئی ہے۔ملک کے مختلف شہروں میں زیرعلاج 4ہزار103 افراد کی حالت تشویشناک ہے۔
اگر پاکستان کی بات کریں تو مزید 258 مریضوں میں کرونا وائرس کی تشخیص ہوئی ہے جس کے بعد ملک بھر میں اس وائرس کے تصدیق شدہ مریضوں کی تعداد 2708 ہوگئی ہے۔جبکہ 13کی حالت تشویشناک ہے۔
کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ملک اٹلی اور سپین نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ ان کے ممالک میں کرونا وائرس کے باعث جاری بحران اپنی انتہا کو پہنچ سکتا ہے۔ انفیکشن اس وقت اپنی انتہا پر ہے مگر کم نہیں ہورہا جس کی وجہ سے ایمرجنسی کا وقت ختم ہونا ابھی مشکل نظر آیا ہے۔
واضح رہے کہ گزشتہ سال چین سے پھیلنے والے وائرس کے دنیا بھر میں اب تک 12 لاکھ 3 ہزار 99 کیسز سامنے آچکے ہیں جن میں 64 ہزار 774 ہلاکتیں بھی ہوچکی ہیں۔
جہاں اس وائرس سے اتنی بڑی تعداد میں ہلاکتیں سامنے آئیں ہیں وہیں کورونا وائرس سے اب تک دنیا بھر میں 2 لاکھ 46ہزار 893 افراد صحت یاب بھی ہوچکے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں