خوبصورت پیروں اور سڈول پنڈلیوں کیلئے جوتے، موزے اور ورزش کی اہمیت

Beautiful and symmetrical legs
EjazNews

جوتے اور موزے :
آپ کی ٹانگوں اور پیروں کو بالکل متناسب رکھنے کے لیے معیاری اور صحیح سائز کے جوتے استعمال کریں۔ جوتے بہت آرام دہ ہو نے چاہئیں۔
اگر آپ کی جیب اجازت دیتی ہے تو آپ اپنی ڈریسنگ سے میچ کرتے ہوئے جوتے استعمال کر سکتی ہیں ۔ جوتوں کے علاوہ پرس ؍بیگ وغیرہ کو بھی میچ کرنے کی کوشش کریں۔
اگر آپ بہت زیادہ پرس بیگ وغیرہ نہیں خرید سکتی ہیں تو ایک سیاہ، ایک میرون، ایک سفید، ایک نیوی بلیو اور گرے رنگ کا پرس خرید لیں بس یہ پانچ رنگوں کے پرس آپ کے ہرلباس کے ساتھ سوٹ کر جائیں گے۔
گھر میں ہلکی چپلیں اور سینڈل وغیرہ استعمال کیا کریں اور باہر جا نے کے لیے ذرا مضبوط اور بھاری قسم کی چپلیں اور سینڈلز استعمال کریں۔ اگر آپ کا قد چھوٹا ہے تو آپ تھوڑی اونچی ایڑی کے جوتے استعمال کر سکتی ہیں۔ لیکن کبھی بھی ڈھیلی ایڑی کی سینڈل نہ پہنیں یہ آپ کے گھٹنوں کو تباہ کر دے گی۔
ہمیشہ صحیح سائز کے آرام دہ جوتے استعما ل کریں ۔ نہ تو وہ ڈھیلے ہوں اور نہ ہی تنگ ہوں۔ بلکہ بالکل مناسب ہوں۔ غلط سائز آپ کی ایڑیوں کو تباہ کر دے گا۔
جوتوں کے پنجے (آگے کی طرف سے) تنگ نہیں ہونے چاہیے۔ ورنہ آپ کو چلنے میں دشواری ہوگی۔
گھر میں واپس آتے ہی جوتے اتار دیں اور چپلیں پہن لیں۔ باہر رہنے سے آپ کے پائوں پسینے سے بھیگے ہوتے ہیں اس لئے جوتے بھی بھیگ جاتے ہیں۔ انہیں دوبارہ استعمال کرنےسے پہلے خشک ہونے کا موقع دیں اس طرح آپ بیماریوں کو روک سکیں گی۔
اگر آپ کے پیروں میں بہت پسینہ آتا ہے تو سوتی موزے استعمال کیا کریں۔یہ موزے پسینہ جذب بھی کرتے ہیں اور ا ن میں ہوا کی آمدو رفت بھی آسانی سے ہو سکتی ہے۔
پسینے کی وجہ سے موزے گندے ہو جاتے ہیں۔ اس لیے روزانہ یا تو دھوتی رہیں یا بدلتی رہیں۔ پسینے والے موزو ں کو بار بار استعما ل کرنا مناسب نہیں ہے۔ اس سے کئی بیماریاں پیدا ہو سکتی ہیں۔
بہت سے موزے ایسے ہوتے ہیں جن میں اوپر کی طرف بہت ٹائٹ لاسٹک لگی ہوتی ہے ایسے موزے استعما ل نہ کریں۔ اس سے آپ کے پیروں اور ٹانگوں کا دوران خون رک جاتا ہے۔ موزوں کو گرم پانی میں نہ دھویا کریں ۔ ورنہ لاسٹک برباد ہو جاتا ہے۔
ورزشیں:
یہاں چند ایسی ورزشیں تحریر کی جارہی ہیں جن پر عمل پیرا ہو کر آپ اپنی ٹانگوں،پیروں، تلوئوں اور گھٹنوں کو Shapeمیں رکھ سکتی ہیں۔
1۔ کرسی پر اس طرح بیٹھ جائیں کہ آپ کی ایڑیاں تو فرش کو چھو رہی ہوں لیکن پنجے اوپر کی طرف ہوں۔ اب گھٹنوں کو حرکت دیں آگے پیچھے دائیں بائیں ۔ یہ ایسی آسان ورزش ہے جو آپ کسی بھی وقت، کسی بھی جگہ بھی بیٹھے بیٹھے کر سکتی ہیں چاہے آپ دفترکی کرسی پر بیٹھی ہوں یا بس میں سفر کر رہی ہوں ۔ یہ ورزش آپ کو آرام پہنچائے گی۔ ٹانگوں کی تھکن اتارنے کے لیے یہ ورزش بہت کارآمد ہے۔
2۔ دونوں ٹانگوں کو ملا کر کھڑی ہو جائیں۔آہستہ آہستہ پنجوں کے بل کھڑی ہونا شروع کردیں۔ اس طرح کہ آپ کے جسم کا پورا وزن آپ کے پنجوں پر آجائے ۔ پھر پہلی پوزیشن میں واپس جائیں اور پھر اس طرح کھڑی ہوں۔
فرش پر بالکل سیدھی لیٹ جائیں۔ ہاتھوں کو موڑ کر سر کے نیچے رکھ لیں اس طرح لیٹیں کہ دونوں ٹانگیں ایک دوسرے سے ملی ہوئی ہوں۔ اب دائیں ٹانگ اوپر اٹھائیں پنڈالی ، گھٹنا اور پنجہ دونوں بالکل ایک سیدھ میں سخت حالت میں ہوں ،اب اس پیر کو گول گول گھمانا شروع کردیں۔ یہی عمل بائیں ٹانگ کے ساتھ کریں۔ دس دفعہ دہرائیں۔ اس ورزش سے گھٹنوں پر جمی ہوئی چربی ختم ہو جائے گی۔ اس کے علاوہ گھٹنوں پر گول گول دائروں میں تیل کی مالش بھی گھٹنوں کے موٹاپے کو ختم کرنے میں بہت مفید ہوتی ہے اور اس کا مثبت اثر بھی بہت جلد سامنے آجاتا ہے۔
5۔ اپنے کمرے میں گھٹنوں اور ہاتھو ں کے بل تیز تیز چکر لگائیں اس طرح جیسے گھوڑا دوڑ رہا ہو۔ اس دوران اپنی ٹانگوں کے نچلے حصوں کوبالکل سیدھا رکھیں۔
اس سے آپ کی ٹانگیں سیڈول ہو جائیں گی اور اس تھوڑی سی پریکٹس کے بعد آپ کو اس عمل میں دشواری محسوس نہیں ہوگی۔ شروع شروع میں چکروں کی تعداد کم رکھیں اور آہستہ آہستہ اس میں اضافہ کریں۔
6۔ ٹانگوں کو ایک دوسرے سے ملا کر کھڑی ہو جائیں۔ اپنے ہاتھوں کو موڑ کر سینے پر رکھ لیں۔ اب ایڑیوں کے بل کھڑی ہو جائیں ۔ گھٹنوں کو موڑ لیں اور آہستہ آہستہ اس وقت تک بیٹھتی جائیں جب تک آپ کی Buttock آپ کی ایڑیوں کو چھونے نہ لگیں ۔ یہاں ہاتھ کھول کر سامنے کی جانب کر لیں۔ اب دوبارہ ہاتھوں کو موڑ کر سینے پر رکھیں اور اپنی ایڑیوں پر بیٹھ جائیں۔
اب دایاں ہاتھ اور دائیں ٹانگ کو سامنے پھیلا لیں ۔ تین تک گنیں۔ پھر پہلی پوزیشن پر واپس آکر یہی عمل بائیں ٹانگ سے کریں۔ یہ ورزش دس دفعہ ہونی چاہیے۔
7۔ فرش پر اس طرح بیٹھ جائیں کہ ٹانگیں آگے کی طرف پھیلی اور ملی ہوئی ہوں۔ پھر دونوں ہاتھوں سے دونوں پنجوں کو چھوٹی اور پہلی پوزیشن میں واپس لے آئیں۔ یہ ورزش دس بار کریں۔
8۔ گھٹنوں کے بل بیٹھ کر آہستہ آہستہ اپنی Buttock کو ایڑیوں سے ٹچ کریں اور اوپر اٹھ جائیں۔ یہ ورزش دس بار کریں۔
9۔ کرسی کے کنارے بیٹھ کر ٹانگیں پھیلا لیں۔ اس طرح کہ آپ کی ایڑیاں فرش کو چھو رہی ہوں۔ اب فرش کو پنجوں سے چھوئیں۔ پھر ایڑیوں سے چھوئیں ۔ پھر پنجوں سے چھوئیں پھر ایڑیوں سے چھوئیں۔
10۔ کروٹ کے ساتھ لیٹ کر اپنی بائیں ٹانگ کونو انچ تک اوپر اٹھالیں۔ چار تک گنتی کریں۔ پھر آہستہ آہستہ پہلی پوزیشن پر واپس آجائیں۔ کچھ دیر تو قف کے بعد پھر کریں۔ اس کے بعد دوسری کروٹ لے کر دائیں ٹانگ سے یہی ورزش کریں۔
11۔ اس طرح سیدھی کھڑی ہو جائیں کہ آپ کی دونوں ٹانگیں ایک دوسرے سے ملی ہوں اور دونوں ہاتھ پہلوئوں میں لٹک رہے ہوں۔ اس کے بعد دائیں گھٹنے کو جہاں تک ممکن ہو اوپر تک اٹھالیں اس کے بعد بایاں گھٹنا اوپر اٹھائیں اور یہی عمل دہرائیں۔ یہ ورزش دس سے بیس بار کریں۔
12۔سیدھی کھڑی ہوجائیں۔ ٹانگیں ایک دوسرے سے ملی ہوئی ہوں۔ پھر ایڑیوں کے بل آجائیں اور دوڑنا شروع کر دیں۔ دوڑتے ہوئی آپ کا پائوں 6انچ تک اوپر اٹھنا چاہیے۔30سیکنڈ تک دوڑنے کے بعد کچھ دیر آرام کریں اس کے بعد پھر اسی طرح دوڑیں۔
13۔سیدھی کھڑی ہو جائیں۔ دونوں پیروں کے درمیان 18انچ کا فاصلہ ہو۔ ہاتھ شانوں سے اوپر اٹھے ہوں۔ پھر جتنا اونچا اچھل سکتی ہوں اچھلیں۔ ہوا میں اچھلتے ہوئے ٹانگیں ملی ہوئی ہوں اور ہاتھ کمر پر ہوں اور جب فرش پر واپس آرہی ہوں تو ہاتھو ں کو پھیلا لیں۔دس دفعہ کریں یہ ورزش آپ کے پورے جسم کو Shapeمیں لے آئیں گی۔
14۔فرش پر اس طر ح بیٹھیں کہ ٹانگیں ایک دوسرے کو کراس کر رہی ہوں اور دونوں پنجوں کو ہاتھ سے تھام لیں دس تک گنیں پھر پنجوں کو نیچے کی طرف جھکائیں ۔ پھر اوپر لے جائیں۔ دو منٹ تک کریں۔ کچھ دیر توقف کے بعد دوبارہ کریں۔
ان ورزشوں کے علاو جہاں تک ممکن ہو پیدل چلیں۔ گھر کے کام کاج خود سے کرنے کی کوشش کریں۔ اگر آپ دن بھر بیٹھی رہیں گی تو آپ کی ٹانگیں موٹی ہوتی چلی جائیں گی۔ گھریلو کام کرتے رہنا بہت اچھی ورزش ہے۔
ٹانگوں کی صحت کےلیے پیدل چلنا بہت اچھا ہے اور یہ عمل عضلات کو بھی مضبوط کرتا ہے۔ اس لیے روزانہ کافی دیر تک چہل قدمی کیا کریں۔ یہ ورزش آپ کی ٹانگوں کو انتہائی متناسب اور سڈول کر دےگی۔
حرا تمکین

اپنا تبصرہ بھیجیں